پنجاب ٹیچر یونین کا 10 فروری کو پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے دھرنے کا اعلان

پنجاب ٹیچر یونین کا 10 فروری کو پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے دھرنے کا اعلان

  

لاہور (لیڈی رپورٹر)اساتذہ اپنے مطالبات اور حقوق کیلئے 10 فروری کو پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے احتجاجی دھرنا دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی صدر چوہدری محمد سرفراز، سید سجاد اکبر کاظمی، رانا لیاقت علی،امتیاز طاہر، جام صادق،  رانا انوار، راناالطاف حسین، ساجد محمود چشتی،طارق زیدی، عبدالقیوم راہی، سعید نامدار، افضل کیانی، رحمت اللہ قریشی، عبد الطارق نیازی،رانا طارق، راؤ عابد، عابد محمود ڈوگر، صفدر کالرو، مرزا اختر بیگ، شیکیل احمد چوہدری، منیر انجم و دیگر نے مشترکہ طور پر کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین کا کوئی سیاسی ایجنڈا نہیں۔ہم اپنے حقوق مانگنے کے لئے سراپا احتجاج ہیں۔مہنگائی نے  زندگیاں اجیرن کر دی ہیں۔ ایک طرف حکومت گزشتہ دو سال سے ملازمین کو طفل تسلیاں دے رہی ہے اور وعدہ خلافیاں کر رہی ہے تو دوسری طرف پُرامن احتجاج پر اساتذہ راہنماؤں کو شوکاز نوٹس دئیے جا رہے ہیں۔10فروری کو پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد کے سامنے پنجاب ٹیچرز یونین پنجاب ہزاروں اساتذہ سمیت آل گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس پاکستان کے پُرامن احتجاج اور دھرنے میں بھر پور شرکت کرے گی۔اگر انتظامیہ کی طرف سے کوئی منفی ہتھکنڈہ استعمال کیا گیا تو پنجاب کی ہر بڑی شاہراہ پر احتجاج اور دھرنا دیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -