وکلا کے احتجاج اور توڑ پھوڑ کا واقعہ، جسٹس اطہر من اللہ سے ملاقات کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے اہم ہدایت کردی

وکلا کے احتجاج اور توڑ پھوڑ کا واقعہ، جسٹس اطہر من اللہ سے ملاقات کے بعد چیف ...
وکلا کے احتجاج اور توڑ پھوڑ کا واقعہ، جسٹس اطہر من اللہ سے ملاقات کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے اہم ہدایت کردی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد کچہری میں تجاوزات کیخلاف آپریشن کے دوران چیمبرز گرانے کے خلاف وکلا کے احتجاج اور توڑ پھوڑ کے واقعے کے بعد چیف جسٹس آف اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد سے سپریم کورٹ میں ملاقات کی ہے۔ملاقات میں جسٹس اطہر من اللہ نے جسٹس گلزار احمد کو واقعے کی تفصیلات سے آگاہ کیا جس کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے واقعے میں ملوث افراد کے خلاف قانونی کارروائی کی ہدایت کردی ۔

 واضح رہے کہ احتجاج کرنے والے وکلا نے چیف جسٹس بلاک میں داخل ہو کر کھڑکیوں کے شیشے توڑ ے،عملے کو باہر نکال کر ججز کو اپنے چیمبر میں محصور کردیااورچیف جسٹس اطہر من اللہ بھی اپنے چیمبر میں محصورہو گئے۔وکلانے اسلام آباد کی ضلع کچہری میں تمام عدالتیں بند کرادیں،اسلام آباد ہائیکورٹ میں مقدمات کی کارروائی روک دی گئی،اسلام آباد ہائیکورٹ میں تمام سائلین کا داخلہ بھی بند کردیاگیا،اسلام آباد ہائیکورٹ کی سروس روڈ بھی ٹریفک کیلئے بندکردی گئی۔

واضح رہے کہ رات گئے اسلام آبادکچہری میں تجاوزات کیخلاف آپریشن کے دوران وکلا کے چیمبرز گرا دیئے گئے تھے، سی ڈی اے حکام کاکہناتھاکہ اسلام آبادکچہری میں سرکاری زمین پروکلا چیمبرز بنائے گئے تھے ،آپریشن میں سی ڈی اے کے شعبہ انفورسمنٹ اور پولیس نے حصہ لیا،حکام نے کہاکہ سی ڈی اے نے حکمت عملی کے تحت رات کے وقت آپریشن کیا۔

مزید :

قومی -