ریکوری کیلئے پیپر ملوں کے اثاثہ جات کی فروخت پر حکم امتناعی

ریکوری کیلئے پیپر ملوں کے اثاثہ جات کی فروخت پر حکم امتناعی

لاہور(نامہ نگار)سول جج رانا محمد سعید نے سوئی نادرن گیس پائپ لائن لمیٹڈ کی جانب دو پیپرز ملز سے90 کروڑ روپے کی ریکوری کے لئے دائر دعویٰ میں زمان پیپر ملز اور فلائنگ پیپر ملز کے اثاثہ جات فروخت کرنے پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے20 جنوری کو ان کے ڈائریکٹرز کو جواب سمیت عدالت میں طلب کرلیا ہے سوئی نادرن گیس پائپ لائن لمیٹڈ کے وکیل عمر شریف نے فاضل عدالت نے دائر کردہ ریکوری کے دعویٰ میں موقف اختیار کیا ہے کہ زمان پیپر ملز محکمہ کا19 کروڑ جبکہ فلائنگ پیپر ملز71 کروڑ کی ڈیفالٹر ہیں اور بڑی مدت سے وہ گیس کا بل ادا نہیں کر رہے جبکہ اس دوران انہوں نے متعدد بار بل کی قسطیں بھی کروئیں مگر انہوں نے بل ادا نہ کیا لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ اس سے قبل کہ وہ اپنے اثاثہ جات فروخت کرکے کہیں غائب ہو جائیں محکمہ کو ان سے ریکوری کروائی جائے عدالت نے حکم امتنائی جاری کرتے ہوئے دونوں پیپر ملز کو اثاثہ جات فروخت کرنے سے منع کرتے ہوئے ان کے ڈائریکٹرز کو جواب سمیت طلب کر لیا ہے۔

ریکوری جواب

مزید : صفحہ آخر