ملازمین کے لئے میگا پراجیکٹ،اَپ گریڈیشن

ملازمین کے لئے میگا پراجیکٹ،اَپ گریڈیشن

  

حضرت علی کرم اللہ وجہ، کا بچوں کی تربیت کے حوالے سے ایک خوبصورت فرمان ہے کہ والدین قدرت رکھنے کے باوجود اپنے بچوں کی جائز خواہشات کی تکمیل میں بھی تساہل سے کام لیں تاکہ انہیں اس نعمت کی قدر کے ساتھ ساتھ ناجائز خواہش کرنے کی جرآت نہ ہو ااس فرمان کے مصداق بالا آخر ایک سال کی جدوجہد اور اپنے جائز حقوق کے حصول کی خاطر گرمی اور سردی کی موسمی شدت کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اس کو مسلسل جاری رکھنے کا عزم ملازمین کے لئے ثمر آور ثابت ہوا اللہ کے خاص فضل وکرم سے خادم پنجاب محمد شہبا ز شریف کی توجہ مرکوز ہوگئی، جس کے نتیجے میں ماہ ربیع الاول کے بابرکت مہینے میں جمعہ کے روز اور سال نو کے آغاز پر پنجاب بھر کے کلیریکل کیڈر کے سرکاری ملازمین کی اپ گریڈیشن کی منظوری دے دی گئی، جس سے پنجاب کے لاکھوں ملازمین کے دِلوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ،دیر آید درست آید ۔

بلاشبہ کلیریکل کیڈر حکومتی مشینری میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے، جس کے بغیر مشینری کا چلنا دشوار ہے سرکاری کاغذ کا پہلا با ضابطہ واسطہ کلرک ہی سے پڑتا ہے اور وہ اس کو ڈائری کر کے سرکاری دستاویز کی حیثیت دے دیتا ہے سرکاری کاغذ کے دو تقاضے ہوتے ہیں کہ اسے غور سے پڑھا جائے اور اسے فائل کا روپ دے کر ضروری کاروائی کی فراغت کے بعد ریکارڈ کا حصہ بنا کر محفوظ کر لیا جائے یہ دونوں اہم ذمہ داریاں کلرک کے فرائض منصبی میں شامل ہیں ،یعنی وہ صحیح معنوں میں سرکاری دستاویز ات کا امین کہلاتا ہے ۔قیام پاکستان سے لے کر آج تک کلرک ہمیشہ محرومی کا شکار نظر آیا ہے اسے جسم اور روح کا رشتہ برقرار رکھنے کے لئے ہمیشہ بے شمار پاپڑ بیلنے پڑے ہیں حکومت پنجاب نے نہ صرف اس حقیقت کو کھلے دل سے تسلیم کیا،بلکہ عملی طور پر وزیراعلیٰ پنجاب کی منظورکی گئی سمری، جس کا بعد ازں محکمہ خزانہ پنجاب نے نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے کے مطابق جونےئر کلرک کو گریڈ 7سے گریڈ11،سینئر کلرک کو گریڈ 9سے گریڈ14اسسٹنٹ کو گریڈ 14سے گریڈ 16اور سپرنٹنڈنٹ کو گریڈ 16سے ریگولر گریڈ17سے نوازا گیا ہے وہاں ساتھ ہی ٹیکنیکل کیڈر کے گریڈ 5 تا 16 کے تمام سرکاری ملازمین کو بھی ہر دس سال بعد اگلے سکیل میں ٹائم سکیل پر موشن دے دی گئی ہے اور اس کا اطلاق یکم جنوری 2016ء سے کیا گیا ہے۔اس تاریخی فیصلے سے نہ صرف کلیریکل کیڈر کی سروس پُر کشش ہو جائے گی، بلکہ اعلیٰ تعلیم یافتہ ذہین نوجوانوں کا رجحان بھی اس کی جانب بڑھے گا، جس سے حکومتی کارکردگی میں اضافہ ہونے کے ساتھ ساتھ دفتری ماحول میں بھی خوشگوار تبدیلی آئے گی اور حکومتی گڈ گورنس کے وژن کو بھی تقویت ملے گی۔

کلیریکل کیڈر کی اپ گریڈیشن کی منظوری خادم پنجاب کی جانب سے سرکاری ملازمین کے لئے خوبصورت میگا پراجیکٹ کی تکمیل ہے، جس سے ہر ملازم کی تنخواہ میں نہ صرف اضافہ ہو گا، بلکہ عہدہ بھی بڑھے گا اپ گریڈیشن ہر سرکاری ملازم کو بلا تفریق دو فائدے ضرور دیتی ہے پہلے نمبر پر اپ گریڈیشن اچھا سٹیٹس دیتی ہے،جو معاشرے میں اس کی عزت اور وقار کا باعث بنتا ہے، جبکہ دوسرے نمبر پر اسے اچھی بنیادی تنخواہ فراہم کرتی ہے، جو بعد از ریٹائر منٹ پنشن کی صورت میں بقیہ ماندہ زندگی آبرو مندانہ طریقے سے گزارنے میں سہولت فراہم کرتی ہے اس انمول حکومتی تحفے سے اسے حقیقی خوشی میسر آئے گی اور جب وہ اس خوشی کا اظہار اپنے بیوی بچوں اور اپنے اہل و عیال کے درمیان بیٹھ کر کرے گا تو بچے پوچھیں گے کہ پاپا یہ خوشی کس بات پر منائی جا رہی ہے تو جواب آئے گا آپ کے پاپا کو خادم پنجاب نے اپ گریڈ کر دیا ہے اس سے آپ کے پاپا کا معاشرے میں مقام بلند ہو اہے تنخواہ بڑھی ہے، جس سے آپ کی تعلیم اور صحت کے حصول میں بہتری کے امکانات پیدا ہوں گے آپ کی یہ دونوں ضروریات اب زیادہ بہتر طریقے سے پوری ہوں گی ،اس خوشی پر نہ ہوائی فائرنگ ہو گی نہ آتش بازی اور نہ چراغاں، بلکہ پورے پنجاب میں پر کیف جشن کا سماں ہے اللہ تعالیٰ کے حضور شکرانے کے نفل ادا کئے جارہے ہیں مبارکبادوں کا سلسلہ جاری ہے یہ خوشی براہ راست روح میں اتر تی جارہی ہے اور صحیح معنوں میں یہی حقیقی خوشی ہے یہ ساری خوشگوار فضا خادم پنجاب کے ایک عظیم اور تاریخی فیصلے کی مرہون منت ہے ۔ موجودہ حکومت نے سات عشرے قبل بنائے گئے پے سکیلز تبدیل کر کے نئی تاریخ رقم کر دی ہے اور کلرک کے سکیل کو اکائی ہندسے سے دوہرے ہندسے میں جانے کا شرف بھی حاصل ہو گیا ہے۔

اعلیٰ پائے کے منتظم اور درد دل رکھنے والے عوامی وزیر اعلیٰ کے اس تاریخی اقدام نے ایک بار پھر ان کی صلاحیتیوں کا لوہا منوالیا ہے اور دس لاکھ ملازمین اور ان کے اہل خانہ کے دل جیت لئے ہیں اور ان کو اپنا ہمنوا بنا لیا ہے، جبکہ ناعاقبت اندیشوں کی طرف سے ملازمین مخالف ہونے کا تاثر بھی زائل کر کے بے بنیاد پر اپیگنڈے کو ہوا میں اڑا دیا ہے ۔ایک حدیث نبویؐ کا مفہوم ہے کہ اللہ انسان سے اس وقت سب سے زیادہ خوش ہو تا ہے، جب وہ اپنی ودیعت کی گئی حاکم اعلیٰ کی صفت کسی بندے کو عطا کرتا ہے اور وہ بندہ صاحب اختیار بن جاتا ہے اور اس کے اس اختیار سے جب دوسرے انسان کو فائدہ پہنچتا ہے اور وہ انسان خوش ہو جاتا ہے تو اللہ تعالیٰ اس وقت اپنے بندے سے بہت زیادہ خوش ہوتا ہے ۔اپ گریڈیشن کے اس عظیم تاریخی فیصلے سے لاکھوں انسانوں کو فائدہ پہنچا ہے ان کے دل خوش ہوئے ہیں اور بے اختیار ان کی زبانوں سے شکر کے کلمات ادا ہو رہے ہیں اور وہ اپنے حکمرانوں کو دعائیں دے رہے ہیں، مگر شکر کی اس گھڑی میں ملازمین بھی پختہ عہد کریں کہ وہ اپنی کارکردگی میں مزید اضافہ کرتے ہوئے حکومتی گڈ گورننس کے وژن میں اپنا بھر پور حصہ ڈالیں گے اور عالمی سطح پر قابل اعتراف صلاحیتوں کے مالک وزیراعلیٰ کے شانہ بشانہ محنت سے کام کر کے صوبے کو عظیم سے عظیم تر بنائیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب اور ان کی پوری ٹیم کا یہ ناقابل فراموش کارنامہ تاریخ میں سنہری حروف سے لکھا جائے گا اور بالخصوص چیف سیکرٹری پنجاب خضر حیات گوندل، جنہوں نے ملازمین اور وزیراعلیٰ پنجاب کے درمیان پُل کا کردار ادا کرتے ہوئے اپنے حصے کا پورا کریڈٹ اپنے نام کیا ہے۔

مزید :

کالم -