پاکستان رواں برس 1ارب کروڑ ڈالر کی کپاس درآمد کرے گا

پاکستان رواں برس 1ارب کروڑ ڈالر کی کپاس درآمد کرے گا

کراچی( اکنامک رپورٹر ) ماضی میں پاکستان کپاس برآمد کرنے والے ممالک کی فہرست میں تیسرے نمبر پر تھا اور اب نوبت یہاں تک آن پہنچی ہے کہ پاکستان کو اپنی ضرورت پوری کرنے کے لئے بھی کپاس درآمد کرنا پڑتی ہے۔ایک محتاط اندازے کے مطابق، رواں برس پاکستان کو کپاس کی لگ بھگ 40 لاکھ بیلز درآمد کرنا پڑیں گی جس کے لئے تقریباً ڈیڑھ ارب ڈالر کا زرمبادلہ خرچ کرنا پڑے گا۔ایک طرف جہاں حکومت معیشت کا پہیہ چلانے کی خاطر بیرونی ممالک سے قرض لے رہی ہے وہیں یہ ڈیڑھ ارب ڈالر تجارتی خسارے میں اضافے کا سبب بنیں گے۔ گزشتہ مالی سال بھی کپاس کی کم پیداوار نے معاشی ترقی کی شرح کو اعشاریہ 5 فیصد تک متاثرکیا تھا۔سونے پر سہاگہ یہ کہ ٹیکسٹائل ملز مالکان نے حکومت سے خام کپاس کی درآمدی ڈیوٹی میں 4 فیصد کمی کا مطالبہ بھی کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ رواں سیزن میں کپاس کی پیداوار گزشتہ سیزن کے مقابلے میں 11 فیصد زائد رہی ہے مگر اب بھی اس کی پیداوار ملکی ضرویات سے کافی کم ہے۔

مزید : کامرس


loading...