آئے روز کی انکوئریاں اساتذہ سرکاری ڈیوٹیوں کا بائیکاٹ ، سکولوں کی تالہ بندی کریں گے

آئے روز کی انکوئریاں اساتذہ سرکاری ڈیوٹیوں کا بائیکاٹ ، سکولوں کی تالہ بندی ...

 لاہور(حافظ عمران انور سے ) آئے روز انکوائریوں سے تنگ سکول سربراہان اور اساتذہ نے سکولوں کی تالہ بندی کی دھمکی دے دی،انکوائریوں سے خوفزدہ اساتذہ نے امتحانات میں ڈیوٹیوں ،مردم شماری ،الیکشن ڈیوٹی اور پولیو ڈیوٹیوں کے بائیکاٹ کا فیصلہ کر لیا ، اساتذہ اور محکمہ تعلیم میں رسہ کشی سے تدریسی عمل متاثر ہونے کا خدشہ ، ٹیچرز یونینز نے حکومت پر دباؤ ڈالنے کے لئے اگلے ہفتے گرینڈٹیچرز الائنس کا اجلاس طلب کر لیا ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم میں بڑے پیمانے پر سکول سربراہان اور اساتذہ کی انکوائری کے معاملے پر اساتذہ اور محکمہ تعلیم میں ٹھن گئی ہے ۔ڈسٹرکٹ پبلک انسٹرکشن کے تحت خراب نتائج اور سکولوں سے بڑے پیمانے پر طالب علموں کے انخلاء پر سینکڑوں سکول سربراہان اور اساتذہ کے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت انکوائریوں کا سلسلہ شروع کیا گیا جس سے سکول سربراہان اور اساتذہ سخت پریشان ہیں ۔اساتذہ کا کہنا ہے کہ سکولوں سے طلبہ کے انخلاء کی ذمہ داری ان پر ڈالنا نا انصافی ہے ۔دوران تعلیم بڑے پیمانے پر بچوں کے سکول چھوڑنے کی وجہ مطلوبہ تعداد میں اساتذہ کی کمی ہے ۔جس کو پورا کرنا حکومت کا کام ہے ۔سکولوں میں بچوں کی تعداد زیادہ ہے جبکہ اساتذہ کم ہیں ۔ریٹائرڈ ہونے والے ٹیچرز پرکئی کئی ماہ متبادل ٹیچرز فراہم نہیں کئے جاتے ،سکول سربراہان کی طرف سے محکمہ تعلیم کو اساتذہ کی خالی اسامیوں کو پر کرنے کا کہا گیا لیکن حکومت اس کی طرف بھی کوئی توجہ نہیں دے رہی ۔پنجاب ٹیچرز یونین کے صدر سجاد اکبر کاظمی اور سیکرٹری رانا لیاقت نے کہا ہے کہ محکمہ تعلیم اپنی نااہلیوں کو چھپا کر تمام تر خرابیوں کی ذمہ داری اساتذہ پر ڈال رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ سکولوں میں اساتذہ سے غیر تدریسی کام لئے جا رہے ہیں کبھی ان کو الیکشن ڈیوٹیز پر کام کا کہا جاتا ہے اور آئے روز پولیو ورکرز کے ساتھ کام کے لئے بھیج دیا جاتا ہے جس سے سکولوں میں تدریسی عمل متاثر ہو رہا ہے ۔یونین کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ہم نے محکمہ تعلیم کے اعلی حکام کے سامنے چار مطالبات رکھے ہیں جن میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کا خاتمہ ،اور پرانے ڈائریکٹوریٹ کی بحالی،دانش اتھارٹیز اور پنجاب ایگزامینیشن کمیشن کو دئے گئے سکولوں کی واپسی ،اور ڈراپ آؤٹ پر اساتذہ کو دئیے گئے شوکاز نوٹسز اور سزاؤں کا مکمل خاتمہ شامل ہیں ۔محکمہ تعلیم نے اگر ان کے یہ مطالبات تسلیم نہ کئے تو اساتذہ سکولوں کی تالہ بندی امتحانات میں ڈیوٹیوں ،مردم شماری ،الیکشن ڈیوٹی اور پولیو ڈیوٹیوں کے بائیکاٹ کا مکمل بائیکاٹ کرے گی

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...