یونیورسٹی کا شعبہ فزکس قادیانی ڈاکٹر کے نام کرنے کا فیصلہ واپس لیا جائے،علماء

یونیورسٹی کا شعبہ فزکس قادیانی ڈاکٹر کے نام کرنے کا فیصلہ واپس لیا ...

لاہور (پ ر) ملک کی قابل ذکر 20بڑی دینی جماعتوں ورلڈ پاسبان ختم نبوت کے سربراہ علامہ محمد ممتاز اعوان جے یو آئی کے راہنما حافظ حسین احمد جے یو پی کے مفتی عاشق حسین عالمی تحریک تحفظ حرمین کے میاں محمد طاہر جماعت اسلامی کے علامہ شعیب الرحمن علماء و مشائخ اہلسنت کے صدر پیر ولی اللہ شاہ جماعت الدعوۃ کے علی عمران شاہین عالمی تحریک ختم نبوت کے مولانا پیر سلمان منیر جمعیت اہلحدیث کے شیخ محمد نعیم بادشاہ جمعیت اہلسنت کے مولانا محمد حنیف حقانی تحریک ملت جعفریہ کے علامہ وقار حیدر نقوی سنی علماء کونسل کے پیر سیف اللہ چشتی ملی یکجہتی کونسل کے سردار محمد خان لغاری مجلس احرار کے قاری یوسف احرار جمعیت مشائخ پاکستان کے پیرسلیم عباس تحریک حرمت رسولؐ کے ڈاکٹر شاہد نصیر مصطفائی جسٹس موومنٹ کے میاں اشرف عاصمی ایڈووکیٹ تحریک اتحاد بین المسلمین کے عنایت حسین جعفری تحریک اہلسنت کے پیر جمشیدنورانی اور تحریک اتحاد امت کے علامہ عبد النعیم نعمانی نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کے پے درپے قادیانیت نواز اقدامات سے غیور اسلامیان پاکستان کے اندر شدید بے چینی و اضطراب کی لہر دوڑ گئی ہے جو کسی بہت بڑی دینی تحریک کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتی ہے۔ حکومت نے اپنی قادیانیت نوازی ترک نہ کی تو مسلمانوں کو قادیانیت نواز سیاسی جماعت کو ووٹ نہ دینے کی شرعی مہم شروع کی جائیگی۔علماء نے کہا دینی جماعتوں کے تمام تر احتجاج کو خاطر میں نہ لاکر صدر ممنون حسین نے قائد اعظم یونیورسٹی کے شعبہ فزکس قادیانی ڈاکٹرعبدا سلام سے منسوب کرنا اپنے حلف سے غداری ہے ۔ انتظامیہ یہ فیصلہ فوری واپس لے بصورت دیگر دینی جماعتیں حکومت کیخلاف ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہونگی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...