32برس بیت گئے ،کچی آبادی نجف کالونی کے مکین مالکانہ حقوق سے محروم

32برس بیت گئے ،کچی آبادی نجف کالونی کے مکین مالکانہ حقوق سے محروم

لاہور(اقبال بھٹی)لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی کچی آبادیوں کے مکینوں کو 32سال بعد بھی مالکانہ حقوق نہ مل سکے،کچی آبادی کے مکین ایل ڈی اے کے ناروا سلوک کی وجہ سے بد دل ہو گئے ،ایل ڈی اے کے دفتر کے چکر لگا کر تھک گئے ہیں لیکن ہر بار اعتراض لگا دیا جاتا ہے ان خیالات کا اظہار ہنزہ بلاک اقبال ٹاؤن میں موجود کچی آبادی نجف کالونی کے مکینوں نے روزنامہ پاکستان کے سروے میں کیا۔اس موقع پر شاہد بٹ،نسیم عرسی شاہ،چوہدری افضل،توحید خان ، توصیف احمد، عبدالرؤف، محمد سرور بٹ، مظفر ،ڈاکٹر افتخار ، محمد علی،محمد طارق،رضوان منیر،محمد عرفان،محمد یعقوب کھوکھراور سجاد احمدنے بتایا کہ نجف کالونی کچی آبادی 1980سے پہلے کی بنی ہوئی ہے،مگر تب سے لیکر آج تک ہمیں مالکانہ حقوق نہیں دیے گئے جس کی وجہ سے ہم لوگ بڑے پریشان ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ان 32 سالوں میں ہمارے بزرگ بھی اس دنیا سے چلے گئے ہیں اب اللہ جانے ہمیں بھی اپنی زندگی میں مالکانہ حقوق ملتے ہیں کہ نہیں۔روز نامہ پاکستان سے مزیدبات کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ نجف کالونی میں ہماری رہائش ہے ،اور اگر ہم اپنے گھر کے باہر یا گلی میں کوئی چھوٹا مو ٹا کام کرتے ہیں ،تو ایل ڈی اے والے فوری اسے بند کرا دیتے ہیں ،جس کی وجہ سے بھی ہمیں بڑی پریشانی ہوتی ہے ،کچی آبادی نجف کالونی کے مکینوں نے حکام بالا سے اپیل کی ہے کہ ہمیں ہمارے گھروں کے مالکانہ حقوق دیے جائیں تا کہ ہمیں سکون مل سکے ،اس حوالے سے جب ایل ڈی اے کچی آبادی کے افسران سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ اتھارٹی نے1985سے پہلے کی قائم کچی آبادیوں کو مالکانہ حقوق دے دیے ہیں ،صرف ان پلاٹوں کے مالکانہ حقوق نہیں دئیے گئے جن کو پہلے مالکان نے فروخت کر دیا تھا کیونکہ کچی آبادیوں کے بارے میں ایک پالیسی بنائی گئی تھی کہ مالکانہ حقوق پہلے مالک کو ہی دئیے جائیں گے اور مالکانہ حقوق ملنے کے 5سال بعد اسے کسی دوسرے آدمی کو بیچا جا سکے گا ،لیکن اس کے باوجود پہلے مالکان نے مالکانہ حقوق حاصل کئے بغیر بیچ دیے تھے جن کو اب مالکانہ حقوق نہیں دیے جا رہے ہیں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...