دہشتگردوں کی لاشوں کا پوسٹ مارٹم نہیں ہوسکا ،مفروروں کی تلاش کیلئے سرچ آپریشن

دہشتگردوں کی لاشوں کا پوسٹ مارٹم نہیں ہوسکا ،مفروروں کی تلاش کیلئے سرچ ...

  



لا ہور (اپنے کرا ئم ر پو رٹر سے) سی ٹی ڈ ی کی جانب سے مبینہ مقابلے میں ہلا ک ہو نے والے گلشن اقبال پا ر ک د ھما کہ کے معا ون د ہشتگردو ں کی لا شوں کا تا حا ل پو سٹ ما رٹم نہ ہوسکا جبکہ فرا ر ہو نے والوں کی تلاش کے لئے حساس ادروں اور پو لیس نے گزشتہ روز بھی مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن کیا ۔ واضح ر ہے کہ دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے جن سے بارودی مواد، اسلحہ اور حساس مقامات کے نقشے بھی ملے ہیں۔تفصیلا ت کے مطا بق گلشن اقبال پارک میں خود کش دھماکہ کرنے والے حملہ آور کے دو سہولت کاروں شاہد اور جہانزیب کو چند روز قبل گرفتار کیا گیا ۔ تفتیش میں ملزما ن نے انکشاف کیا کہ دونوں ملزمان نے حملہ آور کی معاونت کی تھی اور دھماکے کے وقت بھی پارک کے باہر موجود تھے۔ دوروز قبل گرفتار ملزمان کواسلحہ کی برآمد گی کے لئے شیخوپور ہ کے قریب لیجا یا جا ر ہا تھا کہ ملزمان کے ساتھیو ں نے انہیں چھڑانے کی کوشش کی ۔ فائرنگ کے تبادلے میں چھ دہشت گرد مارے گئے جبکہ تین بھاگ نکلے۔پو لیس کے مطا بق گلشن اقبال کے دھماکے میں ملوث دو ملزموں ثناء اللہ اور خان زیب کو اسلحہ برآمدگی کے لئے لے جایا جا رہا تھا کہ شیخوپورہ بائی پاس کے قریب ملزمان کے ساتھیوں نے چھڑانے کی کوشش کی۔ سی ٹی ڈی اور دہشت گردوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں6 دہشت گرد مارے گئے جبکہ تین فرار ہو گئے۔سی ٹی ڈی ترجمان کے مطابق دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے۔ ان سے بارودی مواد، اسلحہ اور حساس مقامات کے نقشے بھی ملے ہیں۔ یا د ر ہے گرفتار ملزمان نے نامعلوم مقام پر تفتیش میں بتا یا تھا کہ گلشن اقبا ل دھماکے کی منصوبہ بندی کالعدم تنظیم کے لاہور کے امیر محمدخان نے کی تھی جبکہ حملہ مہمند ایجنسی کے رہائشی ناصر نے کیا تھا جو برقع پہن کر ٹوٹی دیوار سے پارک میں داخل ہوا تھا۔ ذرائع کے حوالے سے مزید بتایا گیا کہ دھماکے میں ملوث 8 ملزمان تاحال مفرور ہیں جن میں محمد خان، شوکت خان ،ابراہیم خان اور اعتبار شاہ ،حکم خان،مزمل خان،عبدالحنان اور توکل جان شامل شامل ہیں۔ ان میں سے شوکت اور توکل جان نے حملہ آور کو خود کش جیکٹ بنا کر دی تھی جبکہ باقی بھی منصوبہ بندی میں شریک تھے۔ یاد رہے کہ گلشن اقبال پارک میں ہونے والے دھماکے میں 72 افراد شہید ہوگئے تھے۔

مزید : علاقائی


loading...