سید علی گیلانی اور میر واعظ عمرفاروق کا شہیدنوجوان کو خراج عقیدت

سید علی گیلانی اور میر واعظ عمرفاروق کا شہیدنوجوان کو خراج عقیدت

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سیدعلی گیلانی اور حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں شہیدہونے والے نوجوان مظفر احمد نائیکوکوشاندار خراج عقیدت پیش کیا ہے ۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق مظفر احمد کو فوجیوں نے ضلع بڈگام کے علاقے ماچھواہ میں محاصرے اور تلاشی کی کارروئی کے دوران شہید کر دیا تھا۔ سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کر کے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے اوربعد میں جعلی مقابلوں میں شہیدکیاجاتاہے ۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج جعلی مقابلوں کے حوالے سے انتہائی بدنام ہے اور جب بھی کوئی آزادی پسندنوجوان اس کے ہاتھ لگتاہے تواسے جعلی مقابلے میں شہید کیا جاتاہے۔ سید علی گیلانی نے کہاکہ ماچھواہ کے رہائشیوں کابھی یہی کہنا ہے کہ مظفراحمد فوج کے ساتھ جھڑپ میں شہیدنہیں ہوابلکہ اسے جعلی مقابلے میں شہیدکیا گیا۔حریت چیئرمین نے کہا کہ کشمیری نوجوان اپنے گرم گرم لہو سے ایک نئی تاریخ رقم کررہے ہیں لہذا کشمیری عوام پر اب ایک بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ اپنے عظیم شہداء کے خون کے ساتھ کسی کو بیوفائی کرنے کی ہرگز اجازت نہ دیں ۔حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے سرینگر میں جاری بیان میں مظفر احمد کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری نوجوان ایک عظیم مقصد کے لیے اپنی جانیں قربان کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہداء کامقدس لہو ایک ضروررنگ لائے گا۔ انہوں نے 6 جنوری 1993کے شہدائے سوپور کو بھی شاندار خراج عقیدت پیش کیا ۔انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ بے گناہ شہریوں کے قتل میں ملوث فوجی اہلکاروں کوآج تک انصاف کے کٹہرے میں کھڑا نہیں کیا گیا۔یاد رہے کہ 6جنوری 1993کو بھارتی فورسزنے سوپور قصبے میں آگ لگا کر 60سے زائد شہریوں کو شہید اور ساڑھے تین سو سے زائد دکانوں ،مکانوں اور عمارتوں کو نذر آتش کردیا تھا۔

مزید : عالمی منظر


loading...