چین اور اقوام متحدہ آستانہ مذاکرات کا خیر مقدم کرتے ہیں

چین اور اقوام متحدہ آستانہ مذاکرات کا خیر مقدم کرتے ہیں

جنیوا (این این آئی)چین اور اقوام متحدہ شامی بحران کا حل تلاش کرنے کے لئے آستانہ میں ہونیوالے مذاکرات کا خیرمقدم کرتے ہیں اور توقع کرتے ہیں کہ یہ مذاکرات شورش زدہ ملک میں سیاسی امن کی بحالی کیلئے ثمر بار ثابت ہوں گے ، ابھی تک یہ بات واضح نہیں ہے کہ 23جنوری کو ہونے والے آستانہ مذاکرات میں کون سے فریق حصہ لیں گے تا ہم یہ بات یقینی ہے کہ چینی نمائندے مذاکرات میں شامل ہونگے ۔ان خیالات کا اظہار اقوام متحدہ میں چین کے خصوصی نمائندے زی زیاؤ یان نے اپنے ایک بیان میں کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ مذاکرات اسی طرح ہوں گے جس طرح ماضی میں امن بات چیت ہوتی رہی ہے ، ان میں تمام فریقوں کی نمائندگی ہو گی اور تحمل کا مظاہرہ کیا جائے گا ۔دریں اثنا زی زیاؤ یان جنیوا کے بعد یورپی یونین ترکی اور روس جائینگے ،ان کے اس دورے کا مقصد مختلف گروپوں کے درمیان رابطوں میں اضافہ ہے تا کہ اس بحران کا سیاسی حل تلاش کرنے کیلئے پر امن عالمی کوششوں کی مدد کی جاسکے ، حال ہی میں شامی حکومت اور بڑے اپوزیشن گروپ ملک میں فائربندی اور امن مذاکرات دوبارہ شروع کرنے پر رضا مند ہوئے ہیں جس سے مسئلے کے سیاسی اور پر امن حل کی امید پیداہوئی ہے ۔

مزید : عالمی منظر


loading...