حکمرانوں کیخلاف کاروائی تک شفاف احتساب شروع نہیں ہوسکتا :عمران خان

حکمرانوں کیخلاف کاروائی تک شفاف احتساب شروع نہیں ہوسکتا :عمران خان

لودھراں(مانیٹرنگ ڈیسک228آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے لودھراں ٹرین حادثے کا شکار ہونے والوں کے لواحقین سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ لودھراں ٹرین حادثہ پہلا نہیں تیسرا حادثہ ہے، کوتاہی برتنے پر وزیر ریلوے کو استعفیٰ دینا چاہئے، نیب کی وجہ سے کرپشن کم نہیں بڑھ رہی ہے جبکہ بڑے ڈاکوؤں پر ہاتھ نہ ڈالنے تک کرپشن ختم نہیں ہو سکتی، آئندہ الیکشن کیلئے رابطہ مہم شروع کر دی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لودھراں میں ٹرین حادثے کا شکار افراد کے لواحقین سے تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،عمران خان نے کہا کہ لودھراں ٹرین حادثہ انسانی غفلت کے باعث پیش آیا،یہ ٹرین حادثہ پہلا نہیں اس لئے وزیر ریلوے کو کوتاہی برتنے پر استعفیٰ دینا چاہئے، وزیر کے استعفیٰ تک شفاف انکوائری ممکن نہیں ، لودھراں ضمنی الیکشن میں نواز شریف نے لودھراں کیلئے ڈھائی ارب روپے ترقیاتی فنڈز دینے کا وعدہ کیا تھا اگر حکومت ڈھائی ارب کے فنڈ سے ایک جنگلہ لگا دیتی تو یہ حادثہ پیش نہ آتا،انہوں نے کہا کہ نیب وہ ادارہ ہے جس کی وجہ سے ملک میں کرپشن کم نہیں بلکہ بڑھ رہی ہے، نیب نے کبھی بڑے ڈاکوؤں پر ہاتھ نہیں ڈالا صرف چھوٹے چوروں کو گرفتار کرتی ہے، نیب میں نواز شریف کے12اور شہباز شریف کا ایک کیس ہے جب تک وہ ان کیخلاف کارروائی نہیں کرتی اس وقت تک شفاف احتساب شروع نہیں ہو سکتا، عمران خان نے کہاکہ پانامہ لیکس میں ہمارا کیس مضبوط ہے اور امید ہے فیصلہ ہمارے حق میں آئے گا۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے آئندہ الیکشن کی تیاریوں کیلئے عوامی رابطہ مہم کا آآاز شروع کر دیا ہے۔ بعدازاں جہانگیر ترین نے عمران خان کو لودھراں پہنچنے اور لودھراں میں ٹرین کے سانحے میں شہید بچوں کے لواحقین کے گھر جاکر ان سے ملاقات کی، اس موقع پر تحریک انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر ترین بھی ان کے ہمراہ تھے، ملاقات میں عمران خان نے بچوں کے ورثا سے تعزیت کی اور ان سے ان کے دکھ درد میں برابر کے شریک ہونے کا اظہار کیا، عمران خان اور جہانگیر ترین دونوں رہنماؤں نے بچوں کے روح کی ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول


loading...