شاہ محمود قریشی کے دورہ لال گڑھ کی جھلکیاں(محمد اسحاق گبول سے)

شاہ محمود قریشی کے دورہ لال گڑھ کی جھلکیاں(محمد اسحاق گبول سے)

*مرکزی راہنماء تحریک انصاف شاہ محمود قریشی جب لال گڑھ چوک میں پہنچے توراہنماء تحریک انصاف سردار اطہر حسن گورچانی نے درجنوں گاڑیوں اور سینکڑوں موٹر سائیکلوں کے کارواں (بقیہ نمبر22صفحہ12پر )

سے اُن کامثالی اور شانداراستقبال کیا اور کبوتر وغبارے بھی چھوڑ ے گئے ۔

*شاہ محمود قریشی نے دن بارہ بجے لال گڑھ پہنچنا تھا لیکن وہ تین بجے پنڈال میں داخل ہوئے اس موقع پر پنڈال آئی آئی پی ٹی آئی آئی اور گو نواز گو کے نعروں سے گونج اُٹھا۔

*شاہ محمود قریشی کے اسٹیج پر بیٹھتے ہی کارکنان کی بڑی تعداد نے اُنہیں گھیر لیا ،کارکنان کی بڑی تعداد شاہ محمود قریشی کے ساتھ ’’سلیفیاں ‘‘ بنواتی رہی ۔

*سابق ممبرصوبائی اسمبلی وراہنماء تحریکِ انصاف سردار اطہر حسن گورچا نی کے استقبالیہ خطاب کے دوران مسائل کے اظہار پر شاہ محمود قریشی تحریر کرتے رہے ۔

*اسٹیج پر مخدوم شاہ محمود قریشی کے دساتھ میزبان اطہر حسن گورچانی ،سابق ایم این اے سردار سیف الدین کھوسہ،سابق ایم پی اے ڈاکٹر اختر ملک،ایم پی اے جاویدانصاری ،سابق ایم پی اے ملک احمد حسن ڈیہڑ،ملک اقبال ثاقب ،ملک راشد کا مران ودیگر راہنمائموجودتھے۔

*راہنماء تحریک انصاف سردار اطہر حسن گور چانی نے مخدوم شاہ محمود قریشی کو بلوچی تلوار تحفہ میں پیش کی جبکہ سندھ سے آئے حاجی خان کلا چی نے شاہ محمود قریشی کوسندھی ٹوپی اور اجرک پیش کی ۔

ضرور پڑھیں: ڈالر سستا ہو گیا

*تحریک انصاف کے جلسہ لال گڑھ میں سردار دوست محمد مزاری اور ایم پی اے سردار رضاخان دریشک کی عدم موجودگی پر چہ میگوئیاں بھی جاری رہیں ۔

*تحریک انصاف کے جلسہ کے دوران جنریٹر کی خرابی کے باعث کچھ دیر کے لئے مقررین کا خطاب رُکا رہا تاہم کار کنان کی جانب سے آواز بلند ہوئی کہ یہ ن لیگ کی سازش ہے ۔

1 *شاہ محمود قریشی جنہیں خطاب پر عبور حاصل ہے دوران خطاب لوگوں سے استفسار کیا کہ پا نامہ کیا ہے جن کو پتا ہے وہ ہاتھ کھڑا کریں بعد میں خود ہی کہہ دیا کہ جن کو پتا نہیں اُن کو بتانے آیا ہوں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...