سانحہ لودھراں پر وزیرریلوے سعد رفیق استعفیٰ دیں ‘ ظہور دھریجہ

سانحہ لودھراں پر وزیرریلوے سعد رفیق استعفیٰ دیں ‘ ظہور دھریجہ

ملتان (سٹی رپورٹر)سانحہ لودھراں پھاٹک پر ریلوے کے وزیر استعفیٰ دیں ۔ غفلت کے مرتکب ڈرائیور ، فائر مین اور گیٹ مین کو سخت ترین سزا دی جائے ۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستا ن قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے تعزیتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ جائے حادثہ پر انڈر پاس 27 سال سے منظور ہے۔ لاہور میں چند ہفتوں کے اندر انڈر پاس اور فلائی اوور بن جائے ہیں مگر سرائیکی وسیب سے مسلسل سوتیلی ماں کا سلوک ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں لاہور اورنج ٹرین منصوبے کو ٹیکس کی مد میں 20 ارب روپے چھوڑے گئے جبکہ سرائیکی وسیب کو چند کروڑ (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

بھی نہیں ملتے ۔ انہوں نے کہا کہ دھریجہ پھاٹک حادثہ کے لواحقین کے گھروں میں آج بھی صفِ ماتم بچھی ہے اور وہاں سے آج بھی رونے کی آوازیں آتی ہیں مگر حکمرانوں کو کچھ سنائی نہیں دیتے۔ ظہور دھریجہ نے جب تک سرائیکی صوبہ نہیں بنے گا ، اس خطے کو شناخت کی طاقت نہیں ملے گی ، وسیب کے لوگوں سے تیسرے درجے کا سلوک ہوتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز اہم اجلاس کے دروان مخدوم یوسف رضا گیلانی ، مخدوم جاوید ہاشمی اور جمشید دستی نے سرائیکی صوبے کی بھرپور حمایت کی لیکن جب تک مخدوم ، وڈیرے ، جاگیردار ، گدی نشین اور ارکان اسمبلی ہمارے ساتھ سڑکوں پر نہیں آئیں گے ، صوبہ نہیں ملے گا ۔ اس موقع پر سینئر صحافی ریحان برنی ، معروف قانون دان ظفر محمود انجم اور سابق ایم پی اے فرقان مغل کے بھائی ابوسفیان مغل کی وفات پر اظہار تعزیت کیا گیا ۔ اجلاس میں عابد سیال ، حیات اللہ نیازی ، مقصود دھریجہ ، حاجی عید احمد، زبیر دھریجہ، عامر سلیم، افضال احمدبٹ ، محمد دین دھریجہ اور دوسرے موجود تھے ۔ اجلاس میں دربار فرید پر پابندیوں اور زائرین کو سہولتیں نہ دینے پر قرارداد مذمت منظور کی گئی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...