ٹرین حادثہ ‘ عینی شاہدین کے بیانات قلمبند ‘ ڈرائیور ‘ فائر مین ‘ گیٹ مین سے گھنٹوں تفتیش

ٹرین حادثہ ‘ عینی شاہدین کے بیانات قلمبند ‘ ڈرائیور ‘ فائر مین ‘ گیٹ مین سے ...

ملتان(جنرل رپورٹر)لودہراں اور آدم واہن کے درمیان ریلوے پھاٹک پر ہونے والے حادثہ کی انکوائری کے لئے چیف آپریٹنگ سپرنٹنڈنٹ محمود الحسن کی سربراہی میں چیف مکینیکل انجینئر شاہد عزیز‘چیف انجینئر اوپن لائن بشارت وحید اور چیف سگنل انجینئر عطاء اللہ نے گزشتہ روز جائے حادثہ پر انکوائری کرتے ہوئے عینی شاہدین ‘ملازمین کے بیانات قلمبند کئے اور پھر تھانہ سٹی لودہراں میں زیر حراست ٹرین ڈرائیور راجہ ذوالفقار‘فائرمین توقیر مشتاق اور گیٹ مین فاضل سے کئی گھنٹوں تک پوچھ گچھ کی(بقیہ نمبر35صفحہ12پر )

گئی ‘ٹیم ایک مصرو ف دن گزارنے کے بعد ملتان آئی جہاں ریلوے انتظامیہ ملتان نے انکوائری پر آنے والی ٹیم کے اعزاز میں ڈی ایس آفس میں پرتکلف ضیافت کا اہتمام کررکھا تھا ذرائع نے بتایا کہ حادثہ میں ہلاک ہونے والے بچوں کے گھروں میں صف ماتم بچھا ہوا ہے اور ان کی بھوک مری ہوئی ہے پورا ملک سوگ میں مبتلا ہے لیکن اس حادثہ پر انکوائی کے لئے آنے والے افسران دعوتوں کے علاوہ ریلوے سٹیشن سے ڈی ایس آفس تک پروٹوکول پر توجہ دی گئی ور کینٹ سٹیشن پر کھڑی ان کی مصنوعی سیلونوں پر جتنی پولیس نفری تعینات کی گئی اتنی کبھی بھی پورے سٹیشن پر دکھائی نہیں دیتی ۔ذرائع نے بتایا کہ ٹیم آج بھی ڈی ایس آفس میں موجود رہے گی جہاں محکمانہ کارروائی و دیگر امور نمٹائے جائیں گے ۔دوسری طرف ٹرین ڈرائیور‘ فائر مین اور گیٹ مین کے خلاف تھانہ سٹی لودہراں میں مقدمہ نمبر5/17زیر دفعہ320پی پی سی درج کرلیا گیا ہے جس میں مزید دفعات بھی شامل کئے جانے کا امکان ہے ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ اس حادثہ کے بعد ریلوے کو شدید دباؤ کا سامنا ہے اور جائے حادثہ اور ہلاک ہونے والے بچوں کے لواحقین کا غم و غصہ ٹھنڈا کرنے کے لئے ڈویژنل سطح پر کسی بڑے افسر کی معطلی یا تبادلہ بھی کیا جائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...