پیپلزپارٹی کا ایف بی آر آڈٹ پالیسی پر تحفظات کا اظہار

پیپلزپارٹی کا ایف بی آر آڈٹ پالیسی پر تحفظات کا اظہار

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے ایف بی آرکی آڈٹ پالیسی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایف بی آر کی آڈٹ پالیسی تباہ کن ہے۔ ایف بی آر ایماندار ٹیکس گذاروں کو پریشان کرنے میں مصروف ہے ۔ جو لوگ ٹیکس نیٹ میں موجود ہیں انہیں خوف زدہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ آڈٹ پالیسی سے ٹیکس گذار ٹیکس نیٹ سے باہر نکل سکتے ہیں ۔ سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ نو لاکھ ٹیکس گذاروں میں سے ایک لاکھ لوگوں کا آڈٹ افسوس ناک ہے۔ ایف بی آر ٹیکس ادا کرنے والوں کو مختلف طریقوں سے پریشان کررہا ہے۔ ٹیکس گذاروں کو ہر دوسرے روز نوٹسز جاری کیے جاتے ہیں ۔ ٹیکس گذاروں کے دفاتر پر چھاپے مارے جاتے ہیں ۔ ایف بی آر چاہتا ہے کہ لوگ بلا خوف و خطر ٹیکس نیٹ میں شامل نہ ہوں سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ ایف بی آر ٹیکسوں کا دائرہ کار بڑھانے میں مکمل ناکام ہوچکا ہے۔ ٹیکس گذاروں کی تعداد بڑھنے کی بجائے کم ہورہی ہے ۔ ایف بی آر نے دولت مند فراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کیے۔ ایف بی آر کو سات لاکھ دولت مند افراد کو ڈیٹا دیا گیا تھا ۔ لگتا ہے کہ ایف بی آر نے اس ڈیٹا کو ردی کی ٹوکری میں ڈال دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آڈٹ پالیسی سے ٹیکس گذاروں کی تعداد میں کمی ہوگی ۔ اگر ٹیکس نیٹ کو بڑھانا ہے تو آڈٹ کو ختم کرنا ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...