حکومت مہاجروں کو 5فیصد خیرات بھی دینے کو تیا رنہیں، ڈاکٹر سلیم حیدر

حکومت مہاجروں کو 5فیصد خیرات بھی دینے کو تیا رنہیں، ڈاکٹر سلیم حیدر

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدرنے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی حکومت نے مہاجروں کو تباہ وبرباد کرنے کا تہیہ کررکھا ہے ۔ سندھ کے شہری اکثریتی مہاجر علاقوں میں نہ تو تعمیروترقی کے کام کرائے جارہے ہیں اور نہ ہی وہاں آباد کروڑوں مہاجروں کو ان کا جائز حق دیا جارہا ہے۔ سرکاری ادارے مہاجر افسران اور نوجوانوں کیلئے نوگو ایریا بنادیئے گئے ہیں۔ سندھ کے کسی بھی صوبائی محکمے میں کسی بھی کلیدی عہدے پر کوئی مہاجر افسر موجو دنہیں ہے۔ جبکہ کراچی اور حیدرآباد جیسے مہاجر اکثریتی شہروں میں بلدیہ سے لے کر ایچ ڈی اے اور ایری گیشن سے لے کر محکمہ پولیس تک سندھی افسران بیٹھے وسائل لوٹ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی حکومت کئی سالوں سے مہاجروں کو غلام بنانے کے نت نئے منصوبے تیار کررہی ہے ، مہاجروں کو مایوسی کی نہج پر پہنچادیا گیا ہے کہ اب مہاجر نوجوان تعلیم سے بھی دور ہوتے جارہے ہیں۔ کیونکہ اعلیٰ تعلیم یافتہ مہاجر نوجوانوں کی تمام تر کوششوں کے باوجود انہیں نہ تو ملازمتیں دی گئیں اور نہ ہی کوئی باعزت روزگار ملا جس کے باعث ان میں احساس محرومی اور مایوسی انتہا کو پہنچ چکی ہے۔ اگر پاکستان کے اسٹیبلشمنٹ اور مقتدر اداروں نے اس صورتحال کا نوٹس نہ لیا تو پھر مہاجر نوجوانوں کا احساس محرومی منفی انداز میں استعمال ہوسکتی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مہاجر محب وطن اور سر تاپاؤں تک پاکستانی ہیں لیکن ان کے ساتھ تیسرے درجے کے شہریوں کا سلوک کیا جارہا ہے۔ پیپلزپارٹی کی حکومت اقتدار سے لے کر اختیارات تک پر قابض ہے اور مہاجروں کو 5فیصد کی خیرات دینے کو تیا رنہیں ہے۔ انہوں نے پاکستان کے اعلیٰ اختیاری حلقوں سے اپیل کی کہ وہ مہاجروں میں پائی جانے والی احساس محرومی اور مایوسی کے تدراک کیلئے مہاجر محب وطن جماعتوں کو مضبوط کریں اور انہیں آزادانہ سیاست کرنے کا حق دیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...