صوبائی اسمبلی سے مذہب تبدیلی بل کی منظوری کے بعد گورنرسندھ نے وزیراعلیٰ کی سفارش پر مستردکردیا

صوبائی اسمبلی سے مذہب تبدیلی بل کی منظوری کے بعد گورنرسندھ نے وزیراعلیٰ کی ...
صوبائی اسمبلی سے مذہب تبدیلی بل کی منظوری کے بعد گورنرسندھ نے وزیراعلیٰ کی سفارش پر مستردکردیا

  


کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )گورنر سندھ سعید الزمان صدیقی نے صوبائی اسمبلی سے منظور ہونیوالا مذہبی تبدیلی کابل وزیراعلیٰ سندھ کی سفارش پر مسترد کردیا۔

ذرائع نے نام ظاہرنہ کرنے کی شرط پر بتایاکہ وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی سفارش پر مذہب تبدیلی کا بل ’کرمینل لاءبل‘مستردکردیا جبکہ بل کی حامی ایم کیوایم کی طرف سے بھی ایک رسمی درخواست آئی تھی ۔ بل مسترد کرتے ہوئے گورنر سندھ نے اسلامی نظریاتی کونسل کی قرارداد کابھی جائزہ لیا جس کے تحت اس بل کو غیراسلامی قراردیاگیاتھا جبکہ مبینہ بل کیخلاف احتجاج کو بھی مدنظررکھا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے گورنرکو بھیجی گئی ایڈوائس میں موقف اپنایاتھاکہ حکومت اس بل کی زبان میں کچھ تبدیلیاں چاہتی ہے اورچاہتے ہیں کہ موجودہ حالت میں اس بل کی حتمی منظوری نہ ہو۔ایم کیوایم نے اپنی روایتی درخواست میں موقف اپنایاتھاکہ اراکین اسمبلی کو تجزیے کی مہلت دیئے بغیر عجلت میں بل منظورکرایاگیا۔

گورنر سندھ نے بل مسترد کرتے ہوئے وجوہات میں اسلامی نظریاتی کونسل، ایم کیوایم کے پارلیمانی لیڈر سردار احمد کے خطوط اور بل میں تبدیلی کیلئے مذہبی جماعتوں کے احتجاج کا حوالہ دیا۔

یادرہے کہ گزشتہ سال نومبر میں سندھ اسمبلی نے یہ بل متفقہ طورپر منظور کیاتھا جس میں مبینہ طورپر کچھ غیراسلامی نقاط ہونے کی وجہ سے احتجاج کیاگیاتھا۔

مزید : کراچی


loading...