آرمی ایکٹ میں ترمیم کے وقت شیریں مزاری کیسے اشارے کرتی رہیں؟ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی

آرمی ایکٹ میں ترمیم کے وقت شیریں مزاری کیسے اشارے کرتی رہیں؟ ویڈیو سوشل ...
آرمی ایکٹ میں ترمیم کے وقت شیریں مزاری کیسے اشارے کرتی رہیں؟ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کی قومی اسمبلی نے آرمی ایکٹ میں ترمیم متفقہ طور پر منظور کرلی ہے، جہاں اس واقعے کو تاریخی کہا جارہا ہے وہیں وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری کے اشارے بھی سوشل میڈیا پر موضوع بحث بنے ہوئے ہیں۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزیر دفاع پرویز خٹک ایوان کو آرمی ایکٹ میں ترمیم پڑھ کر سنا رہے تھے ، اس دوران ڈاکٹر شیریں مزاری انتہائی خوشگوار موڈ میں ان کے برابر والی کرسی پر بیٹھ کر کسی دوسرے رکن کے ساتھ خوش گپیوں میں مصروف تھیں۔ اسی دوران انہوں نے ساتھی رکن کو اس طرح کا اشارہ کیا جو سوشل میڈیا پر موضوع بحث بن گیا۔

عدنان حمید نے ٹوئٹر پر لکھا ’ ڈیفنس منسٹر آرمی ایکٹ میں مجوزہ ترمیم پڑھ رہا ہے جبکہ شیریں مزاری ہاتھ کے اشارے سے عوام کو ترمیم سمجھارہی ہے، کیا زبردست سمجھایا ھے واہ ، صرف ایک اشارے سے پوری ترمیم سمجھا دی۔‘

عمر عزیز نے لکھا ’ اسمبلی میں ووٹ کو عزت دو والوں کو شیریں مزاری کا جواب ۔۔۔ ہور چوپو۔‘

نعمان چوہدری نے کہا ’ آرمی ایکٹ ترمیمی بل کے دوران وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری اشاروں کی زبان میں اسکی تشریح کر رہی ہیں۔‘

رانا مظفر نے شیریں مزاری کے اشارے پر ناراضی ظاہر کی اور کہا ’ شیریں مزاری کا اشارہ چیک کریں،،، یہ ہے ہماری پارلیمنٹ اور اس کے معزز ارکان!!! اخلاقیات کا حال دیکھ لیں۔‘

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد