آرمی ایکٹ پر کچھ عناصرمعاملے کو الجھارہے ہیں،ظفرالحق

آرمی ایکٹ پر کچھ عناصرمعاملے کو الجھارہے ہیں،ظفرالحق

  



اسلام آباد(آن لائن) مسلم لیگ (ن) کے سینیئر رہنما راجہ ظفر الحق نے وضاحت کی ہے کہ پارٹی کے اندر کوئی اختلافات نہیں، آرمی ایکٹ پر تمام لیگی اراکین اسمبلی اور ہمارے سینیٹرز نے نواز شریف کے فیصلے پر لبیک کیا ہے تاہم پارٹی میں اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے۔ ہمارے کچھ اراکین یہ جاننا چاہتے تھے کہ قیادت نے غیر مشروط آرمی ایکٹ کی حمایت کیوں کی اس لئے دوبارہ پارلیمانی پارٹی کا اجلاس بلانا پڑا۔ راجہ ظفر الحق نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آرمی ایکٹ کے معاملے پر مسلم لیگی اراکین اسمبلی اور سینیٹرز دونوں متفق ہیں اور سب اس ایکٹ کی حمایت کر رہے ہیں، خواہ مخواہ اس معاملے کو کچھ عناصر الجھارہے ہیں۔پارلیمانی پارٹی کا اجلاس اس لئے بلایا گیا کیونکہ تمام اراکین یہ جاننا چاہتے تھے کہ اس ایکٹ کی حمایت کیوں اور کس طرح کی گئی اور جب ان کو تمام بات بتائی گئی تو پھر دونوں جانب کے اراکین نے کھلے دل سے کہا کہ اگر یہ فیصلہ نواز شریف کا ہے تو ہم سرخم اسے تسلیم کرتے ہیں اور نواز شریف کے بیانئے ووٹ کو عزت دو کا فیصلہ بھی مسلم لیگ کے منتخب نمائندے ہی فیصلہ کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ اراکین نے یہ سوال ضرور کیا کہ میاں نواز شریف اور شہباز شریف کو کم از کم جسٹس فائز عیسیٰ کے خلاف ریفرنس واپس لینے سے ہی مشروط کر دیتے۔

ظفر الحق

مزید : پشاورصفحہ آخر