تعلیمی بورڈ ملتان:انٹرمیڈیٹ سٹوڈنٹس کے داخلے جام، نیا بحران شروع

  تعلیمی بورڈ ملتان:انٹرمیڈیٹ سٹوڈنٹس کے داخلے جام، نیا بحران شروع

  



ملتان (سٹاف رپورٹر)تعلیمی بورڈ ملتان نے سکولز کے بعد کالجز کے کوڈ بلاک کرکے انٹر میڈیٹ کے طلبا وطالبات کے داخلے روک دئیے‘ نیا بحران کھڑا ہوگیا‘بتایا گیا ہے کہ تعلیمی بورڈ ملتان نے ملتان ڈویژن کے سیکڑوں سرکاری و پرائیویٹ کالجز کے کوڈ بلاک کرکے ان میں زیر تعلیم طلبا وطالبات کے ایف اے‘ ایف ایس سی کے داخلے روک دئیے ہیں جس کے باعث ایک نئے بحران نے سر اٹھالیا ہے‘سرکاری (بقیہ نمبر32صفحہ12پر)

و پرائیویٹ کالجز کے سربراہان میں تعلیمی بورڈ ملتان کے اس اقدام پر تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ دنوں تعلیمی بورڈ ملتان کی طرف سے سیکڑوں سرکاری اور پرائیویٹ سکولز کے طلباوطالبات کے داخلے روکے جانے سے بحران پیدا ہو گیا تھا اور اب کالجز کے طلباوطالبات کے داخلے روکے جانے سے صورتحال گھمبیر ہوگئی ہے۔اس بارے میں رابطہ کرنے پر ڈائریکٹوریٹ کالجز کے حکام نے بتایا کہ 2010‘2011‘2012میں سند فیس لاگو نہیں تھی‘یہ بعد میں لاگو کی گئی۔تعلیمی بورڈ کے حکام کا یہ رویہ اور طریقہ انتہائی غلط ہے‘موجودہ طلباو طالبات کے داخلے کسی بھی طور پر روکے نہیں جاسکتے‘کیونکہ انہوں نے تعلیمی بورڈ کے کوئی واجبات نہیں دینے‘اگر 2010‘2011‘2012کے طلباوطالبا ت سے سند فیس وصول کرنا تھی تو جب وہ داخلہ فارم جمع کرا رہے تھے‘ اس وقت وصول کی جاتی‘اب تعلیمی اداروں کے موجودہ سربراہان کے ذمے یہ رقم ڈال دی گئی ہے‘تووہ کیسے اور کہاں سے اور کس مد میں یہ رقوم ادا کریں‘اس بارے میں کالجز سربراہان کا کہنا ہے کہ کالجز کے طلبا وطالبات کو ئی سکولز کے طلبہ نہیں ہیں کہ وہ خاموش رہیں گے‘ کالجز کے طلباوطالبات کے داخلے روکے جانے سے ان کے احتجاج‘ مظاہروں سے طوفان آسکتا ہے اور صورتحال گھمبیر ہو سکتی ہے‘ اس لئے حکومت پنجاب اس بارے میں فوری طور پر لائحہ عمل طے کرے اور اس مسئلے کو حل کرے۔ دوسری جانب سرکاری سکولز سربراہان نے بھی کہا ہے کہ2010‘2011‘2012کے بعد لاگو کی گئی سند فیس وہ اب 9سال بعد کہاں سے دیں‘ کمشنر ملتان کو تعلیمی بورڈ کے حکام کی طرف سے غلط بریفنگ دی گئی ہے‘ فروغ تعلیم فنڈ یا این ایس بی فنڈ‘کہاں سے اور کس مد میں کس طرح ادائیگی کی جائے۔انہوں نے کہا کہ 2010‘2011‘2012میں میٹرک کرنے والے طلباوطالبات کو تعلیمی بورڈ لیٹر لکھے اور جو طلبا وطالبات سند فیس دیں تو انہیں سند دے دی جائے لیکن موجودہ طلباوطالبات کے داخلے روکنے کا اقدام کسی بھی طور پر درست نہیں ہے۔اس حوالے سے موقف کے لئے تعلیمی بورڈ کے پبلک ریلیشنز آفیسر الیاس صدیقی سے ان کے فون نمبر0300-8638060پر رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی مگر ان کا فون اٹینڈ نہیں ہو سکا۔

داخلے

مزید : ملتان صفحہ آخر