سندھ کا کوئی محکمہ درست طریقے سے کام نہیں کر رہا،خرم شیر زمان

  سندھ کا کوئی محکمہ درست طریقے سے کام نہیں کر رہا،خرم شیر زمان

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)صدر پی ٹی آئی کراچی و رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے کہا ہے کہ سندھ میں آٹے کی قیمتوں میں اضافے کی ذمہ دار حکومت سندھ ہے۔ محکمہ خوراک کی جانب سے جنوری میں دیا جانے والا گندم کا کوٹہ چکیوں اور فلور ملز کو اب تک جاری نہیں کیا جاسکا۔ ناجائز منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں نے ایک بار پھر لوٹ مار کا بازار گرم کردیا جس کے خلاف کاروائی کرنے میں حکومت سندھ مکمل طور پر ناکام نظر آرہی ہے۔ میڈیا سیل انصاف ہاوس سے جاری اپنے بیان میں ان کا مزید کہنا تھا کہ چند روز قبل گندم 4400روپے فی 100کلو فروخت کی جارہی تھی لیکن اس وقت 4650روپے فی 100کلو گرام فروخت کی جارہی ہے۔ حکومت سندھ صوبے بھر میں گندم کا بحران پیدا کرنا چاہتی ہے۔ کمشنر کراچی شہر بھر میں آٹے کے نرخوں کو کنٹرول کرنے میں ناکام ہیں۔کراچی میں آٹا 35روپے کے بجائے 65روپے فی کلو فروخت کیا جارہا ہے۔ حکومت سندھ اور کمشنر کراچی کی پرائز کنٹرول کمیٹیاں مکمل ناکام ہوچکی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پرائز کنٹرول کرنا صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے۔ پیپلز پارٹی کی حکومت سندھ اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ کر کے الزام وفاق پر ڈالنا چاہتی ہے۔ حکومت سندھ میں نااہل وزراء کی فوج بھرتی کی ہوئی ہے۔سندھ کا کوئی محکمہ درست طریقے سے کام نہیں کر رہا۔ سندھ کے لوگ پیپلز پارٹی سے چھٹکارا چاہتے ہیں۔  

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...