بینک زرمبادلہ کے کیس سٹیٹ بینک آن لائن پورٹل کے ذریعے جمع کر اسکیں گے

بینک زرمبادلہ کے کیس سٹیٹ بینک آن لائن پورٹل کے ذریعے جمع کر اسکیں گے

  



کراچی (اکنامک رپورٹر)بینک زرمبادلہ کے کیسز اسٹیٹ بینک کے آن لائن پورٹل کے ذریعے برقی طور پر جمع کر اسکیں گے۔مرکزی بینک کے اعلامئے کے مطابق زرمبادلہ کے آپریشنز سے متعلق اسٹیٹ بینک کے دو شعبوں، شعبہ مبادلہ پالیسی (EPD) اور شعبہ زرمبادلہ آپریشنز (FEOD)کے تحت زرمبادلہ کے آپریشنز اور ’ایس بی پی آن لائن پورٹل کے موضوع پر تفصیلی پریزینٹیشنز کا انعقاد کیا ہے۔ رواں ماہ باضابطہ طور پر متعارف کرانے کے بعد بینک زرمبادلہ سے متعلق کیسوں کو اسٹیٹ بینک کے پاس برقی طور پر جمع کر اسکیں گے۔پریزینٹیشن کے دوران اسٹیک ہولڈرز کے لیے آن لائن پورٹل کے استعمال سے متعلق ایک عمومی جائزہ پیش کیا گیا۔ کلائنٹس کو اسٹیٹ بینک کے پاس جمع کرائے جانے والے کیسوں کے اسٹیٹس سے آگاہ کرنے کے لیے سسٹم سے نکلی ہوئی منفرد کیس نمبر پر مشتمل ایک ای میل، اس ای میل ایڈریس پر بھیجی جائے گی جو بینکوں نے کیس جمع کراتے وقت فراہم کی تھی۔ اس کے علاوہ ہر کیس کو تفویض کردہ منفرد نمبر کے ذریعے اپ ڈیٹ پوزیشن کی معلومات اسٹیٹ بینک کی ویب سائٹ سے بھی حاصل کی جا سکتی ہیں۔

ایس بی پی بینکنگ سروسز کارپوریشن (بی ایس سی) کے مینجنگ ڈائریکٹر اشرف خان نے اپنے خطاب کے دوران ملک کی معاشی بحالی اور مستقبل میں ترقی کے حوالے سے کاروباری شعبے کے کلیدی کردار اور اہمیت کو اجاگر کیا۔ انہوں نے کاروباری امور کو ڈجیٹل بنانے اور بغیر کاغذ دفتری ماحول کی سمت پیش رفت کے لیے اسٹیٹ بینک کے اہم اقدامات پر بھی روشنی ڈالی، جن سے ملک کے کاروباری اداروں کو فائدہ پہنچے گا۔ شعبہ مبادلہ پالیسی (EPD) کے ڈائریکٹر نے شرکا کو ملک میں کاروباری احساسات کے فروغ کی خاطر اسٹیٹ بینک کے حالیہ پالیسی اقدامات سے ا?گاہ کیا۔ انہوں نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ اقدامات سابقہ پابندیوں میں نرمی کے ساتھ ساتھ کاروبار میں آسانی اور سہولت پیدا کرنے کے لیے معاشی صورتِ حال کی بہتری کے تناظر میں اسٹیٹ بینک کی کوششوں کا تسلسل ہیں۔واضح رہے کہ کاروباری برادری کو زرمبادلہ کی سرگرمیوں اور ڈجیٹلائزیشن اور کاروبار میں آسانی سے متعلق اسٹیٹ بینک میں ہونے والی کلیدی پیش رفتوں سے آگاہ کرنے کے لیے بینک دولت پاکستان نے لاہور، فیصل آباد، گوجرانوالہ اور سیالکوٹ میں آگاہی سیشنز کا انعقاد کیا۔ ان سیشنز میں مختلف چیمبرز اور ایسوسی ایشنز بشمول پاکستان بزنس کونسل، اوورسیز چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور متعلقہ شہروں کے مقامی ایوان ہائے صنعت و تجارت کی جانب سے نامزد کردہ مختلف کمپنیوں کے 150 سے زائد افسران نے شرکت کی۔

مزید : کامرس