خیبر پختونخوا اسمبلی اجلاس،وزراء نے سوالات کے جوابات دیئے 

   خیبر پختونخوا اسمبلی اجلاس،وزراء نے سوالات کے جوابات دیئے 

  



 پشاور(نیوز رپورٹر)خیبرپختونخوا اسمبلی اجلاس کے دوران رکن اسمبلی نگہت اورکزئی،رکن اسمبلی سراج الدین،ظفر اعظم،صلاح الدین،ثوبیہ شاہد،عنایت اللہ،احمد کنڈی،فیصل زیب،شگفتہ ملک نے محکمہ ٹرانسپورٹ،بلدیات،آبنوشی،مواصلات،تعمیرات اور محکمہ کے متعلق وقفہ سوالات کے دوران سوال کئے نگہت اورکزئی کے سوال پر زمینی سوالات پارلیمانی لیڈر اکرم خان درانی،سردار حسین بابک،خوشدل خان،احمد کنڈی نے سوالات کے دوران محکمہ پی ڈی اے پر کھلی تنقید کی اور کہا کہ مقبول اینڈ سنز کمپنی کو بی آر ٹی کا ٹھیکہ دیا گیا ہے جس کا نام جوابات میں مثبت نہیں سب جوابات کون مول کرکے دیتے ہیں انہوں نے کہا کہ کال سنز کمپنی کا نام مثب ہے انہوں نے کہا کہ اس سوال کو کمیٹی میں ریفر کیا جائے صوبائی وزیر قانون سلطان محمد نے جوابات دیتے ہوئے کہا چار پانچ دن پہلے میں بی آر ٹی پر تفصیلی بحث مباحثہ کیا گیا یہ بہت بڑا پراجیکٹ ہے ہائیکورٹ میں بھی اس کو اچھالہ گیا ہے ابھی تویہ پراجیکٹ مکمل  نہیں ہوا ہے جس پر اتنی بحث ہوگئی ہے اپوزیشن کو اس پر بحث کرنا مذا آتا ہے انہوں نے کہا کہ چائنہ مقبول اور کیل سنز کمپنیاں ان تینوں کمپنیوں کو یکجا کرکے اس کو بی آر ٹی کا ٹھیکہ دیا گیا ہے سپیکر مشتا ق احمد خنی نے رولنگ دیتے ہوئے کہا جس پبلک اکاؤنٹ کمیٹی کی جانب سے آپ لوگ اشارہ کررہے ہیں اس کمیٹی نے ریکوری کے دوران پانچ چھ ارب تک روپے جمع کئے ہیں ہم اس کے تناسب معلوم کرنے کیلئے ایک سال پیچھے اور ایک سال آگے کا موازانا کرتے ہیں کیونکہ ایوان محکمہ ٹرانسپورٹ،بلدیات،آبنوشی کے صوبای وزیر نے چارج نہیں لیا ان کو آئندہ اجلاس تک ڈیفر کردیا گیا سپیکر مشتاق احمد غنی نے اجلاس کو جمعہ 10 جنوری تک ملتوی کردیا۔

مزید : صفحہ اول