ایران کا امریکی ایئر بیس پر حملہ،کتنے لوگ مارے گئے،ایرانی میڈیا نے بڑا دعویٰ کردیا

ایران کا امریکی ایئر بیس پر حملہ،کتنے لوگ مارے گئے،ایرانی میڈیا نے بڑا دعویٰ ...
ایران کا امریکی ایئر بیس پر حملہ،کتنے لوگ مارے گئے،ایرانی میڈیا نے بڑا دعویٰ کردیا

  



تہران(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایرانی پاسداران انقلاب کے عراق میں موجود امریکی فوجی اڈے پر کتنے افراد ہلاک ہوئے،ایرانی حکومت کی جانب سے اعدادوشمار جاری کردیئے گئے۔ایران نے دعویٰ کیا ہے کہ پاسداران انقلاب کے حملے میں اسی افراد مارے گئے ہیں۔

ایرانی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ عین الاسداوراربیل میں واقع امریکی ایئربیس پرمیزائل حملے کئے گئے جس میں اسی افرادہلاک ہوئے۔

ایرانی پریس ٹی وی کے مطابق وہ ان ہلاکتوں کی تاحال آزادانہ تصدیق نہیں کرواسکا ہے۔

ایرانی میڈیا کے مطابق حملے میں امریکی ہیلی کاپٹرز اور دیگر جنگی ساز و سامان بھی تباہ ہوا ہے۔

واضح رہے امریکا ایران کشیدگی کے باعث خطے پر جنگ کے بادل منڈلا رہے ہیں۔ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کے قتل کے جواب میں ایران نے عراق میں امریکیوں کے زیر استعمال فوجی اڈوں پر میزائل حملے کردیے ہیں جس کی تصدیق پنٹا گان کی جانب سے بھی کر دی گئی ہے۔

ایرانی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ حملہ پاسداران انقلاب کی جانب سے کیا گیا جس میں زمین سے زمین پر مار کرنے والے درجنوں میزائل داغے گئے جب کہ حملے میں عراق میں موجود امریکی فوجی اڈوں عین الاسد،اربیل اور تاجی کیمپ کو نشانہ بنایا گیا۔ایرانی میڈیا کے مطابق حملوں کا نشانہ بنائے جانے والے مقامات پر امریکی اور دیگر اتحادی ملکوں کے فوجی تعینات ہیں تاہم تاحال کسی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔

امریکی محکمہ دفاع پینٹا گون نے بھی عراق میں امریکی فوج کے اڈے پرحملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ حملہ مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے 5 بجے ایران سے کیا گیا جس میں ایران نے عراق میں 2 فوجی اڈوں پر ایک درجن سے زائد میزائل فائر کیے اور عین الاسد اور اربیل میں دو عراقی فوجی اڈوں کو نشانہ بنایا گیا۔

امریکی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ امریکی ریڈار دوران پرواز میزائلوں کابروقت پتاچلانے میں کامیاب رہے تھے جس کے باعث امریکی فوجی محفوظ مقام پر منتقل ہوگئے تھے۔

مزید : بین الاقوامی /عرب دنیا