نیب ملزم کی درخواست ضمانت پر سماعت،سپریم کورٹ نے ملک بھر کے ٹرائل کورٹس میں زیرالتوانیب مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں

نیب ملزم کی درخواست ضمانت پر سماعت،سپریم کورٹ نے ملک بھر کے ٹرائل کورٹس میں ...
نیب ملزم کی درخواست ضمانت پر سماعت،سپریم کورٹ نے ملک بھر کے ٹرائل کورٹس میں زیرالتوانیب مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے ملک بھر کے ٹرائل کورٹس میں زیرالتوانیب مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں،سپریم کورٹ نے وجوہات پر مبنی رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیدیا،عدالت عظمیٰ کی جانب سے وفاقی سیکرٹری قانون کو بھی طلب کرلیاگیا،سپریم کورٹ نے اللہ ڈینوبھیوکی ضمانت کی درخواست کے دوران احکامات دیئے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں نیب کے ملزم اللہ ڈینوبھیوکی ضمانت کی درخواست میں سماعت ہوئی۔سپریم کورٹ نے استفسار کیا کہ ملک بھر کی ٹرائل کورٹس میں نیب مقدمات پر سماعت تاخیر کاشکارکیوں ہے؟،وکیل درخواست گزارنے کہا کہ ملزم نیب کی حراست میں ہے اس کی طرف سے آدھی رقم جمع کراتے ہیں ضمانت دی جائے ،جسٹس مشیر عالم نے کہا کہ قانون کے مطابق نیب مقدمات کا30 دن میں فیصلہ ہونا چاہئے،جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ احتساب عدالتوں میں روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہونی چاہئے ۔عدالت نے کہا کہ ابھی ضمانت نہیں دیتے پہلے ریکارڈ منگواتے ہیں ٹرائل کورٹس میں تاخیر کیوں ہو رہی ہے۔

سپریم کورٹ نے ملک بھر کے ٹرائل کورٹس میں زیرالتوانیب مقدمات کی تفصیلات طلب کرلیں،سپریم کورٹ نے وجوہات پر مبنی رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیدیا،سپریم کورٹ نے غیر فعال احتساب عدالتوں کی تفصیلات بھی فراہم کرنے کا حکم دیدیااورآئندہ سماعت پروفاقی سیکرٹری قانون کوطلب کرلیاگیا،سپریم کورٹ نے اللہ ڈینو بھیو کی درخواست ضمانت پر سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد