فوجی قوانین میں ترامیم کے بلز دونوں ایوانوں سے منظوری کے بعد صدارتی توثیق کیلئے ایوان صدر کوارسال

فوجی قوانین میں ترامیم کے بلز دونوں ایوانوں سے منظوری کے بعد صدارتی توثیق ...
فوجی قوانین میں ترامیم کے بلز دونوں ایوانوں سے منظوری کے بعد صدارتی توثیق کیلئے ایوان صدر کوارسال

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)فوجی قوانین میں ترامیم کے بلز کو دونوں ایوانوں سے منظوری کے بعد صدارتی توثیق کیلئے ایوان صدر ارسال کردیا گیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق منگل اور بدھ کو ہنگامی بنیادوں پر سینیٹ ، قومی اسمبلی کے اجلاسوں میں چند منٹ میں آرمی ایکٹ، فضائیہ اور بحریہ کے  قوانین میں ترامیم کو منظور کیا گیا، دونوں ایوانوں میں ترمیمی بلز پر ضابطہ کار کے مطابق بحث نہیں کروائی گئی۔ قومی اسمبلی کے بعد سینیٹ میں بھی اپوزیشن کو ترامیم  پیش کرنے کا موقع نہ مل سکا۔ سینیٹ میں باقاعدہ اس کا نوٹس بھی دیا گیا تھا۔ دونوں ایوانوں سے بل منظوری کے بعد  توثیق کیلئے صدر پاکستان کو بھیج دیا گیا ہے۔ صدارتی توثیق پر وزیراعظم کے پاس یہ اختیار ہوگا کہ وہ مسلح افواج کے سربراہان کی مدت ملازمت میں تین سال کی توسیع کرسکیں۔بل سینیٹ سے ایوان صدر بجھوایا گیا ہے۔

مزید : قومی