صوبائی محتسب کی تقرری کا اختیار گورنر سندھ سے واپس لیکر وزیر اعلیٰ کو تفویض، ترمیمی بل منظور 

صوبائی محتسب کی تقرری کا اختیار گورنر سندھ سے واپس لیکر وزیر اعلیٰ کو تفویض، ...
صوبائی محتسب کی تقرری کا اختیار گورنر سندھ سے واپس لیکر وزیر اعلیٰ کو تفویض، ترمیمی بل منظور 

  



کراچی(صباح نیوز) سندھ اسمبلی نے بدھ کو اپنے اجلاس کے دوران صوبہ سندھ کے لیئے صوبائی محتسب کے تقرر،اس عہدے کا قیام اور اہلیت سے متعلق ایک ترمیمی بل کی منظوری دیدی،بل سے محتسب کا تقرر اور مدت کا تعین ہوگا،ترمیمی بل کے ذریعے صوبائی محتسب کی تقرری کا اختیار گورنر سندھ سے واپس لیکر وزیر اعلیٰ کو تفویض کردیا گیا ہے جس طرح یہ اختیار پنجاب اور کے پی میں گورنر سے لے کر 2010 میں ایک ترمیم کے ذریعے متعلقہ صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کو دیدیا گیا تھا۔

ترمیمی بل ایوان میں پیش کئے جانے کے موقع پر اپوزیشن کے ارکان احتجاج کرتے ہوئے ایوان کی کارروائی سے واک آئوٹ کرگئے اور وہ اجلاس کے ملتوی ہونے تک ایوان میں واپس نہیں آئے۔اپوزیشن نے محتسب کے تقرر کا اختیار گورنر سے واپس لینے پر اعتراض کرتے ہوئے شدید نعرے بازی کی ۔اپوزیشن ارکان اس معاملے پر اپنا موقف پیش کرنا چاہتے تھے لیکن انہیں بولنے کی اجازت نہیں ملی جس پر انہوں نے احتجاجاً واک آئوٹ کا فیصلہ کیا۔وزیر پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ کی جانب سے ترمیمی بل ایوان میں پیش کئے جانے سے قبل وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے ترمیمی بل کے اغراض و مقاصد بیان کرتے ہوئے کہا کہ ہم سندھ میں ایسی ترمیم کرنا چاہتے ہیں کیوں کہ یہ اختیار اب 18 ویں ترمیم کے بعد وزیر اعلی کو حاصل ہے کہ وہ اپنےصوبے میں محتسب کا تقرر کرسکے۔انہوں نے کہا کہ اب تک جو قانون تھا اس میں صوبائی محتسب کی اہلیت اور کئی دوسری باتوں کی صراحت موجود نہیں تھی اب گریڈ 20 کے مساوی یا ہائی کورٹ کے کسی ریٹائرڈ جج کا تقرر کیاجاسکے گاجبکہ محتسب کی ٹرم چار سال کی مدت کو دوسری مرتبہ بھی استعمال کیا جاسکے گا،سندھ اسمبلی نے بل کو کثرت رائے کے ساتھ منظور کرلیا۔سندھ اسمبلی کی کارروائی کے دوران بدھ کو شہید اللہ بخش سومرو یونیورسٹی آف آرٹ اینڈ ڈیزائن اینڈ ہیریٹیج بل متعارف کرادیا گیا جس مزید غور و خوض کے لئے سلیکٹ کمیٹی کے حوالے کردیا گیا۔ایوان کی کارروائی کے دوران  وزیر پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ کی جانب سے موٹر وہیکل ترمیمی بل پیش کیا گیا جس کے تحت سندھ میں اب نئی گاڑی کی رجسٹریشن کی بک جاری کرنے کے بجائے چپ کارڈ جاری ہوگا ۔بل کے مطابق ایم وی آر سمارٹ کارڈ جدید فیچرز پر مبنی ہوگا ۔سندھ اسمبلی نے یہ ترمیمی بل کثرت رائے کے ساتھ منظور کر لیا۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...