پاکستان کرکٹ ٹیم کو ایک اور ہزیمت!

پاکستان کرکٹ ٹیم کو ایک اور ہزیمت!

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم پاکستان کرکٹ ٹیم کو ٹیسٹ سیریز میں بھی ہرا کر ٹیسٹ رینکنگ میں پہلی پوزیشن کی حامل ہو گئی ہے،نیوزی لینڈ نے دوسرا ٹیسٹ بھی ایک اننگز اور176 رنز سے جیت کر دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں وائٹ واش کر دیا، اس سے پہلے ٹی20 میں بھی پاکستان کرکٹ ٹیم کو 2-1 سے شکست ہوئی اور سیریز نیوزی لینڈ نے جیتی، اس کے علاوہ جو اے ٹیم بھیجی گئی اس کا بھی یہی حال ہوا، شاہینوں نے اپنی بری کارکردگی کا نتیجہ بھگتا کہ بیٹنگ، باؤلنگ اور فیلڈنگ  ہر شعبہ میں کمزوریاں ظاہر ہو گئیں۔ کوچ حضرات کو فاسٹ باؤلرز سے بہت توقعات تھیں،لیکن وہ بھی معیار پر پورا نہ اترے۔ یہ جو دوسرا ٹیسٹ ہارا گیا اس کے لئے تو جاوید میانداد جیسے سپر کھلاڑی بھی خوش فہم تھے۔پہلی اننگز میں 300 سے کم سکور کے باوجود ان کو یقین تھا کہ پاکستان یہ میچ جیت جائے گا، ان کو باؤلروں سے توقع تھی اور وہ کہہ اُٹھے اب باؤلرز کیویز کو آؤٹ کریں گے لیکن آؤٹ تو کیا ہونا تھا، کیویز بلے بازوں نے الٹا رنز کا پہاڑ کھڑا کر دیا اور پاکستان کا پہلی اننگز کا سکور برابر کر کے مزید362رنز کے ساتھ اپنی اننگز ڈکلیئر کر دی، جواب میں پوری پاکستانی ٹیم186 رنز پر پویلین لوٹ گئی اور میچ ہار دیا۔اس شکست نے کرکٹ بورڈ، کوچز اور کھلاڑیوں کا بھرم بھی فاش کر دیا ہے۔ثابت ہو گیا کہ مصباح الحق بطور چیف کوچ، یونس خان بیٹنگ اور وقار یونس باؤلنگ کوچ کے طور پر ناکام ثابت ہوئے،باؤلنگ کوچ وقار یونس کی کارکردگی صفر ثابت ہوئی کہ نوجوان باؤلر اپنا رنگ نہ جما سکے،حالانکہ وکٹ فاسٹ باؤلرز کے لئے سازگار تھی۔یہ شکست ایسی ہے کہ مصباح الحق اور یونس خان خود مستعفی ہوں، جبکہ وقار یونس کو برطرف کر دیا جائے اور آئندہ ان کی خدمات حاصل نہ کی جائیں۔انہوں نے تجربہ کار اور نوجوان دونوں کو خراب کیا اور خود کوئی کارکردگی بھی نہ دکھا سکے۔

مزید :

رائے -اداریہ -