میڈیکل یونیورسٹیز کو رواں ماہ امتحانات لینے سے روک دیا گیا

 میڈیکل یونیورسٹیز کو رواں ماہ امتحانات لینے سے روک دیا گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد(آئی این پی) وزارت قومی صحت سروسز نے رواں ماہ کے دوران ملک بھر کی میڈیکل یونیورسٹیز کو امتحانات لینے سے روک دیا۔وزارت کے ترجمان ساجد شاہ نے بتایا کہ قومی صحت سروسز کے سیکریٹری عامر اشرف خواجہ کی زیرصدارت ایک اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ طب کے شعبے کے امتحانات یکم فروری کے بعد کروائے جائیں گے۔ یہ فیصلہ بھی کیا گیا ہے کہ ہر تعلیمی سال کے امتحانات مختلف تاریخوں پر منعقد ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز ہونے والے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر کے اجلاس میں تمام اسٹیک ہولڈرز کی نمائندگی تھی۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ ایک ہفتہ کے دوران ہمیں ہزاروں کالز موصول ہوئیں کیونکہ چند یونیورسٹیز نے رواں ماہ کے آخر تک بند ہونے کے باوجود امتحانات کی تاریخوں کا اعلان کردیا تھا۔انہوں نے بتایا کہ متعدد میڈیکل طلبا مطالبہ کررہے تھے کہ انہیں بھی اسی طرح ترقی دی جائے جس طرح پرائمری اور سیکنڈری اسکولوں کے طلبا کو ترقی دی گئی تھی تاہم اجلاس میں اس بات پر اتفاق رائے ہوا کہ پیشہ ورانہ ڈگری حاصل کرنے والے طلبہ کو بغیر امتحانات کے ترقی نہیں دی جاسکتی۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ امتحانات ہوں گے اور یونیورسٹیز کو فروری میں امتحانات لینے کا پابند بنایا گیا ہے۔ایک سوال کے جواب میں ساجد شاہ نے کہا کہ اس فیصلے کی وجہ سے طلبہ کو امتحانات کی تیاری کے لیے کچھ اور ہفتے ملیں گے۔  
  میڈیکل یونیورسٹیز 

مزید :

صفحہ آخر -