نیب اور امریکی ایجنسی کے درمیان معاہدہ ، ہائیکورٹ کا وفاق کو نوٹس جاری  2ہفتے میں جواب طلب

  نیب اور امریکی ایجنسی کے درمیان معاہدہ ، ہائیکورٹ کا وفاق کو نوٹس جاری ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 اسلام آباد (این این آئی)نیب اور امریکی ایجنسی ایف بی آئی کے درمیان سمجھوتے کیخلاف درخواست پر سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاق،سیکرٹری دفاع،سیکرٹری خارجہ، سیکرٹری قانون وانصاف کو نوٹس جاری کرکے دو ہفتے میں جواب طلب کرلیااور کہاہے کہ ڈپٹی اٹارنی جنرل آئندہ سماعت پر ہدایات لیکر عدالت کو آگاہ کریں۔ جسٹس عامر فاروق نے کابینہ کی جانب سے سمجھوتے کی منظوری کیخلاف درخواست پر سماعت کی۔وفاق کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل سید طیب شاہ عدالت کے سامنے پیش ہوئے جبکہ سول سوسائٹی نامی تنظیم کی جانب سے طارق اسد ایڈووکیٹ عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔ درخواست گزار کے وکیل طارق اسد نے کہاکہ اگر ہمیں ٹریننگ ہی چاہیے تو ایف بی آئی سے ہی کیوں؟۔جسٹس عامرفاروق نے وکیل طارق اسد سے استفسار کیا کہ ایم او یو کیوں کیا گیا۔ وکیل طارق اسد نے کہاکہ کابینہ نے ایم او یو کی منظوری دے دی وجوہات معلوم نہیں۔ عدالت نے کہاکہ کیا آپ کے پاس ایم او یو کی کاپی ہے ایم او یو میں کیا لکھا ہے؟۔درخواست گزار کے وکیل نے کہاکہ یہ نہیں پتہ اگر عدالت ایم او یو منگوا لے تو ہی پتہ چل سکتا ہے۔ وکیل نے کہاکہ ایف بی آئی کے ساتھ اس طرح سمجھوتے کی منظوری پاکستان کے قوانین کی خلاف ورزی ہے۔عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت گیارہ فروری تک ملتوی کردی۔وفاقی کابینہ نے 26 دسمبر کو نیب اور ایف بی آئی کے درمیان سمجھوتے کی منظوری دی تھی۔
نیب اور امریکہ

مزید :

صفحہ آخر -