مانگا منڈی میں گرانفروشوں کی لوٹ مار، تجاوزات مافیا بے لگام 

مانگا منڈی میں گرانفروشوں کی لوٹ مار، تجاوزات مافیا بے لگام 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

مانگا منڈی (ملک ممتاز حسین +ملک احسان الٰہی) ما نگامنڈی میں گرانفروشوں کی لوٹ مار جاری،  غریب عوام کا برا حال، انڈا 20 رو پے میں فرو خت ہو رہا ہے مگر ضلعی انتظا میہ خاموش ہے۔مہنگائی کے ساتھ نا جائز تجاوزات کی بھرمار، جگہ جگہ منی پٹرول پمپ، ایل پی جی گیس کی پانچ درجن کے قریب دکانیں کھلی ہیں،گیس والے ناقص مشینوں سے گاڑیوں میں میں سرعام گیس بھرتے ہیں ایسی صورتحال خوفناک حادثے کا سبب بن سکتی ہے، روزنامہ پاکستان کے نمائندہ کے سروے کے مطابق  قصاب بڑے اور چھوٹے جانوروں کا لاغر اور پانی ملا گوشت گورنمنٹ سے دو سو سے لے کر چار سو روپے فی کلو فروخت کر رہے ہیں اسی طرح سبزی،پھل فروش دس روپے سے لے کر تیس روپے فی کلو تک غریب عوام کو لوٹ کر جیبوں کا صفایا کر رہے ہیں۔ کئی دکان دار اپنی دکانوں کے آگے پھل فروشوں کی ریڑھی سڑک پر کھڑی کرا کر ہزاروں روپے ماہانہ کرایہ وصول کر رہے ہیں اس کے علاوہ چنگ چی رکشے والوں نے سڑک پر قبضہ جما رکھاہے  اور ٹیوٹا ویگنوں والے سڑک کے درمیاں گاڑی کھڑی کر کے سواریاں بٹھاتے ہیں، چوک مانگا منڈی میں ناجائز تجاوزات  کی وجہ سے پیدل چلنا بھی مشکل ہو چکا ہے اور ہسپتال روڈ کی سڑک کی چوڑائی پچاس فٹ ہے مگر رکشہ والوں اور فروٹ ریڑھی والوں کے قبضہ سے اس وقت سڑک 15 فٹ رہ چکی ہے ہسپتال سے ایمبولینس کے ذریعے مریض کو لاہور لے جانے میں مشکلات کا سامنا ہوتا ہے کئی دفعہ ہسپتال پہنچنے سے قبل ہی مریض جاں بحق ہو جاتے ہیں اسی طرح ملتان روڈ کی چوڑائی 120 فٹ ہے مگر صرف چالیس فٹ سڑک رہ چکی ہے۔ مانگامنڈی کے شہریوں محمد یعقوب بھٹی،محمد علی بھٹی،محمد اسلم ذیشان بھٹی،محمد نواز،علی اکبر بھٹی، سرفراز احمد،نواز احمد،محمد اکرام نے ڈی سی او لاہور اور کمشنر اور سی سی پی او لاہور سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔