صوفیا کی تعلیمات سے جرائم پر قابو ممکن ہے،میروجاہت تاجی

  صوفیا کی تعلیمات سے جرائم پر قابو ممکن ہے،میروجاہت تاجی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی (اسٹاف رپورٹر)صوفی ازم سے بھوک، افلاس، جرائم اور دہشت گردی پر قابو پایا جاسکتا ہے۔ صوفیا کی تعلیمات نے ظلمت کدہ ہند میں اسلام کی روشنی پھیلائی۔ آج بھی ان کی تعلیمات پر عمل کرتے ہوئے ہم بہت سارے مسائل پر قابو پاسکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سربراہ بزمِ تاجیہ امجدیہ(رجسٹرڈ)، گدی نشین: خانقاہ تاجیہ امجدیہ، لیاقت آباد، صدر: التاج نیوز(پہلا صوفی ویب چینل)، سرپرست اعلی: دارالعلوم و دارالافتا القادریہ الرزاقیہ التاجیہ، سابق صدر: متحدہ سادات موؤمنٹ پاکستان(سندھ) قاضی سید میر وجاہت علی شاہ تاجی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کے صوفیا کی تعلیمات کو اسکول کے نصاب سے کر یونیورسٹیوں تک پڑھایا جائے۔ صوفیا انسانیت کا درس دیتے ہیں، جو اسلام کی روح ہے۔ اللہ پاک اپنے حقوق معاف کردے گا مگر اپنے بندوں کے حقوق کبھی معاف نہیں کرے گا۔ ہم سب کو سوچنا چاہئے کہ ہمارا پڑوسی، بھائی، بہن، غریب رشتہ دار کس حال میں ہیں۔ یتیموں اور مسکینوں کی خبر گیری کی جائے۔ سندھ حکومت بالخصوص بلاول بھٹوزرداری اس سلسلے میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری سے ملاقات کا وقت مانگا ہے، جو یقینا جلدی مل جائے گا ان کے سامنے بزم تاجیہ امجدیہ (رجسٹرڈ) کا پورا چارٹر پیش کریں گے جس سے انسانیت کی فلاح ممکن ہوسکے گی۔ عوام خوشحال ہوگی تو ریاست خوشحال ہوگی۔ ہمارے یہاں سب سے بڑا مسئلہ بھوک اور افلاس کا ہی ہے۔ اس پر اگر قابو پالیا جائے تو آدھے سے زیادہ مسائل خود بخود حل ہوجائیں گے۔ 

مزید :

صفحہ آخر -