ماضی میں فرقہ واریت، تعصب کو ہوادی گئی، جس کا خمیازہ ہم بھگت رہے ہیں: شبلی فراز

ماضی میں فرقہ واریت، تعصب کو ہوادی گئی، جس کا خمیازہ ہم بھگت رہے ہیں: شبلی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے اپنی ہر پالیسی میں غریب طبقات کا خیال رکھا،ماضی میں ملک کی غیر منصفانہ تقسیم، فرقہ واریت تعصب اور لسانیت کو ہوا دی گئی،جس کا خمیازہ ہم بھگت رہے ہیں، سانحہ مچھ کے لواحقین سے مذاکرات جاری ہیں، وزیراعظم عمران خان کوئٹہ جائیں گے، متاثرین اپنے غم میں ڈوبے ہوئے ہیں اور ان کی کوئی ڈیمانڈ نہیں آئی، بعض لوگ سیاست کرتے ہیں اور پیچیدگی پیدا کردیتے ہیں۔ گزشتہ روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے صحت اور تعلیم پر خصوصی توجہ دی ہے،ہمیشہ غریب طبقہ کو انہوں نے پہلی ترجیح دی ہے،احساس پروگرام لنگرخانے اور نوجوان پروگرام وزیراعظم کی مرہون منت ہیں۔لسانیت فرقہ واریت کی بنیاد پر ایسے واقعات نہیں ہونے چاہئیں کہ لوگوں کے گلے کاٹ لئے جائیں،قتل عام ہو۔ماضی میں ملک کو بے دردی سے لوٹا گیا،وزیراعظم پسماندہ اور غریب عوام کو ساتھ لیکر چلنا چاہتے ہیں،ملک بھر میں غریب لوگوں کے لئے لنگرخانے اور رہاشوں کا اہتمام کیا گیا ہے۔ مچھ میں جوکچھ ہوا وہ بہت غلط ہوا، ملزمان کوکیفرکردارتک پہنچانا چاہیے، ماضی میں بھی ایسے دلخراش واقعات ہوتے رہے ہیں لیکن بعض لوگوں کی جانب سے ایسے وااقعات پرپیچیدگیاں پیداکی جاتی ہیں جبکہ متاثرین کی جانب سے کوئی غیرمناسب بات نہیں کی گئی۔انہوں نے کہا کہ چاہتے ہیں جاں بحق افرادکی تدفین ہواورانہیں طے کردہ معاوضہ بروقت ادا ہو۔
 شبلی فراز

مزید :

صفحہ اول -