سعودی وزیر خارجہ سے ٹیلی فونک رابطہ، پاکستان افریقی ممالک کیساتھ معاشی روابط کیلئے پرعزم: شاہ محمود قریشی 

سعودی وزیر خارجہ سے ٹیلی فونک رابطہ، پاکستان افریقی ممالک کیساتھ معاشی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 اسلام آ باد (سٹاف رپورٹر) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود سے ٹیلیفونک رابطہ کیااورجی سی سی کی ممبر خلیجی ریاستوں کی جانب سے باہمی دیرینہ تنازعات کے حل کیلئے آمادگی اور مثبت رویے کو سراہتے ہوئے اسے خلیجی خطے میں امن و استحکام کیلئے نیک شگون قرار دیا،او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے 47ویں اجلاس کے موقع پر مسئلہ کشمیر اور اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان کے خلاف قراردادوں پر سعودی عرب کی حمایت پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ سعودی وزیر خارجہ کی پاکستان آمد کے منتظر ہیں، وزیر خارجہ نے قطر اور خلیجی ممالک کے مابین تنازعات کے حل کیلئے سعودی عرب کے مثبت کردار کو بھی سراہا۔جمعرات کوہونے والے رابطے میں شاہ محمود قریشی نے اپنے سعودی ہم منصب کو کرونا وبا کے باوجود، جی سی سی سمٹ 2021 کے کامیاب انعقاد پر مبارکباد دی۔دونوں وزرائے خارجہ نے بین الاقوامی سطح پر دو طرفہ تعاون کے فروغ اور باہمی دلچسپی کے امور پر مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے کے حوالے سے مختلف پہلوؤں پر مشاورت بھی کی۔علاوہ ازیں شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان افریقی ممالک کے ساتھ اپنے تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے اور افریقی ممالک کے ساتھ معاشی روابط کے فروغ کیلئے پرعزم ہے۔گزشتہ روز وزارتِ خارجہ میں افریقی ممالک موریشس، ماروکو،تونیشیا،جنوبی افریقہ، لیبیا، سوڈان، کینیا اور الجیریا کے سفراء نے وزیر خارجہ سے ملاقات کی اس موقع پرشاہ محمود قریشی نے کہاکہ افریقہ اور پاکستان کے مابین دو طرفہ تعلقات اور معاشی و تجارتی تعاون کے فروغ کے بہت سے مواقع موجود ہیں، ہم افریقی ممالک میں نہ صرف اپنے سفارت خانوں کو اپ گریڈ کر رہے ہیں بلکہ نئے سفارت خانے کھولنے کا فیصلہ کر چکے ہیں۔ہم افریقی ممالک سے بھی توقع کرتے ہیں کہ وہ ویزہ کے اجراء میں اسی طرح وسیع القلبی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پاکستانی بزنس کمیونٹی کو سہولت فراہم کریں گے،ہم اپنے دو طرفہ تعلقات کو اسٹریٹیجک دو طرفہ تعاون کے ساتھ مزید بڑھا سکتے ہیں،ہم افریقی ممالک کے تجارتی وفود کو پاکستان میں خوش آمدید کہیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے جنوری 2019 میں کورونا وبائی صورتحال کے باوجود وزارتِ تجارت کی معاونت سے نیروبی میں ٹریڈ کانفرنس منعقد کی، پاکستان اور افریقی ممالک کے درمیان معاشی تعاون کا فروغ، دو طرفہ تعلقات اور عوام کی سطح پر روابط کو فروغ دے گا، ہم نے ویزہ کے حصول میں سہولیات فراہم کرنے کے لیے عملی اقدامات کیے ہیں۔ہم افریقی ممالک کے ساتھ زراعت، صحت، ٹیکنالوجی، مذہبی سیاحت سمیت متعدد شعبوں میں دو طرفہ تعاون کو فروغ دے سکتے ہیں۔اس موقع پر افریقی ممالک کے سفراء نے پاکستان کی طرف سے افریقہ کے ساتھ اقتصادی و معاشی تعاون کے فروغ کے عزم کو نئے سال کا خوبصورت تحفہ قرار دیتے ہوئے اپنے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔
شاہ محمود قریشی 

مزید :

صفحہ اول -