مضر صحت اجزاء کے استعمال،ملاوٹی اشیاء کی فروخت پر19فوڈپوائنٹس سیل 

مضر صحت اجزاء کے استعمال،ملاوٹی اشیاء کی فروخت پر19فوڈپوائنٹس سیل 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان (سپیشل رپورٹر)جنوبی پنجاب کے مختلف اضلاع میں صحت دشمن عناصر کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں۔ 378فوڈپوائنٹس کی چیکنگ کے دوران غیر معیاری خوراک کی فروخت پر19فوڈ پوائنٹس سیل جبکہ 290کو وارننگ نوٹسز جاری کیے۔تفصیلات کے(بقیہ نمبر21صفحہ5پر)
 مطابق ملتان میں امانت فوڈزسنیکس یونٹ، سعید فوڈز، جاوید کچا پاپڑ یونٹ اور عبدالمنان فوڈز کچا پاپڑ یونٹ کو پاپڑ کی تیاری میں چائنہ سالٹ، کھار، سوڈیم کلورائیڈکی ملاوٹ کرنے پرسیل کر دیا۔ اسی طرح ملتان میں لاثانی چرغہ ہاؤس کو خوراک کی تیاری میں رینسڈ آئل کے استعمال جبکہ عمران پولٹری شاپ اور سبحان اللہ بیف شاپ کو باسی، کم وزن، مضر صحت گوشت کی فروخت کر پر سربمہر کیاگیا۔فوڈسیفٹی ٹیموں نے سرخ مرچوں میں ملاوٹ ثابت ہونے پر رائے اختر کریانہ سٹور، وہاڑی میں عنائیہ فوڈزگرائنڈنگ یونٹ کو سیل کیا۔مصنوعات کی تیاری میں کھلے، ناقابل سراغ کیمیکل کی ملاوٹ کرنے پر نیو شیریں محل بیکرز، خانیوال میں الحنیف بیکرز اینڈ سویٹس جبکہ لودھراں میں ظفرنمکو یونٹ کو فرائنگ کے لیے رینسڈ آئل کے استعمال پر سربمہر کیاگیا۔ ساہیوال میں لبرٹی زنگر اینڈ چکن شوارما کوکھلے مصالحہ جات کے استعمال، پاکپتن میں اویس نمکو یونٹ کو فرائنگ کیلئے کھلے آئل کے استعمال جبکہ اوکاڑہ میں امیر حسین ملک کولیکشن سنٹر کو سکمڈ ملک پاؤڈر سے مصنوعی دودھ تیارکرنے اور پاک بریڈ کنفیکشنری یونٹ کو گندے اور بدبودارماحول کی بناء پر سیل کردیا۔ مزید برآں بہاولنگر میں فرید فوڈ فیکٹری کو سنیکس کی تیاری میں آئل کا باربار استعمال کرنے، الفاروق سویٹس کو پراسیسنگ ایریا میں واشروم کی موجودگی اور رحیم یارخان میں رضوان کریانہ سٹور کو کھلے مصالحے فروخت کرنے پر سربمہر کیا۔مجموعی طور پر کی گئی کارروائیوں کے دوران 1000کلو خام مٹیریل، 550کلو تیار خوراک، 400لٹر شوگر سیرپ، 64کلو ملاوٹی مرچیں، 40کلو مٹھائی برآمد جبکہ 140لٹر رینسٖڈ آئل، 83کلو ملاوٹی مصالحہ جات، 244کلو ممنوعہ اشیاء اور 56لٹر ملاوٹی دودھ تلف کردیاگیا۔
سیل