برطانیہ ‘ 62 فیصد نوجوان الکوحل استعمال کرتے ہیں‘ تحقیقاتی رپورٹ

برطانیہ ‘ 62 فیصد نوجوان الکوحل استعمال کرتے ہیں‘ تحقیقاتی رپورٹ

 لندن (جی این آئی )چیرٹی ڈرنک اویئر کے مطابق بہت سے ایڈلٹس اعصاب شکن دن گزارنے کے بعد ریلیکس ہونے کی غرض سے الکوحل کا استعمال شروع کرتے ہیں ۔چیرٹی ڈرنک اویئر کی ریسرچ کے مطابق 30 سے 45 سال عمر کے 62 فیصد یعنی دو تہائی افراد نے کہا کے سکون کے لئے الکوحل استعمال کرتے ہیں تقریبا 21 فیصد اور چھ میں سے ایک یعنی 15 فیصد خواتین جواب دہندگان نے کہا کے وہ روزانہ یا ہفتے کے زیادہ تر دنوں میں ڈرنک کرتی ہیں ۔ 10 میں سے چار یعنی 40 فیصد خواتین اور ایک تہائی یعنی 34 فی صد مردوں نے کہا کے وہ حکومت کی ڈیلی یونٹ ڈرنک گائیڈ لائن سے زیادہ پیتے ہیں ۔مردوں کے لئے 3-4 یونٹس اور عورتوں کے لئے 2-3 یونٹس مقرر ہے۔ 2 ہزار جواب دہندگان میں سے 44 فیصد نے کہا کے وہ اعصاب شکن کے بعد مے نوشی کو زیادہ پسند کرتے ہیں ایک تہائی سے زائد یعنی 37 فیصد نے جواب دیا کے وہ گھر جاتے ہوئے مے نوشی کا سوچتے ہیں ۔سروے میں 60 فیصد افراد نے کہا کہ الکوحل استعمال کرنے کی وجہ اعصاب شکن کام ہے 49 فیصد نیمالی دبا اور 36 فیصد نے فیملی لائف کو سٹریس کی وجہ قرار دیا جس کے نتیجے میں وہ مے نوشی کرتے ہیں ڈرنک اویئر کے کمپین اینڈ کمیونی کیشنز ہیڈ ایس مکین نے کہا کے الکوحل بری دوست ہے اس صورت میں جب آپ سٹریس سے ڈیل کرنے کی کوشش کر رہے ہوں ڈرنک اویئر کے چیف میڈیکل ایڈوائزر پروفیسر پال ویلیس نے کہا کے الکوحل کے استعمال نیند کا خلل، وزن میں اضافے عارضہ جگر و قلب اور کینسر کے خطرات میں اضافہ کرتا ہے آپ جتنی زیادہ الکوحل استعمال کریں گے آپ کا جسم اس کا اتنا ہی عادی ہوتا چلا جائے گا اس لئے آپ صرف آف ڈے میں ڈرنک لیں تاکہ آپ کا جسم اس کا عادی نہ بن سکے آئی سی ایم نے مئی 2012 میں 30 سے 45 سال عمر کے 2008 بالغ مے نوشوں سے سروے کیا تھا ۔

مزید : عالمی منظر