یوسی 60البدر کالونی سڑکیں ٹو ٹ پھو ٹ کا شکا ر نا قص سیو ریج جا بجا گندگی پا نی نایا ب

یوسی 60البدر کالونی سڑکیں ٹو ٹ پھو ٹ کا شکا ر نا قص سیو ریج جا بجا گندگی پا نی ...

  

لاہور (رپورٹ عبدالمتین) صوبائی دارلحکومت میں یونین کونسل 60 کی اہم کالونی البدر کالونی کھنڈرات میں تبدیل ہوگئی ہے۔ 30 ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل اس کالونی میں ایک بھی مرکز سلامتی نہیں ہے۔ گندگی کوڑا کرٹ عام ہے۔ سٹریٹ لائٹس کا شدید فقدان ہے جبکہ پینے کا پانی بھی میسر نہیں ہے۔ کالونی میں پرائمری سکول تک نہیں اس امر کا اظہار مذکورہ کالونی میں پاکستان کے سروے کے دوران اس حوالے سے لوگوں نے بتایا کہ البدر کالونی میں سیاستدان سیاست سیاست کھیل رہے ہیں۔ آدھا علاقہ ایم این اے ثمینہ گھرکی کا علاقہ ہے جس میں پیپلز پارٹی نے گیس لگا دی ہے دوسرا علاقہ اس سے محروم ہے۔ جس کے خلاف کالونی کے رہائشی سراپا احتجاج ہیں۔ علاقے میں کوئی ڈسپنسری تک نہیں ہے۔ مقامی رہائشیوں عبدالغفور احمد، محمد بوٹا تنویر حسین، محمد خالد، محمد جہانگیر، لیاقت علی نے الزام لگایا ہے کہ مسلم لیگ ن کے مقامی رہنما نے علاقہ مکینوں سے ترقیاتی کاموں کیلئے 6200 فی کس وصول کیے جبک علاقہ میں کوئی بھی ترقیاتی کام نہیں کیا۔ یونین کونسل 60 کے سروے میں علاقہ مکینوں نے ”پاکستان“ کو بتایا کہ علاقہ کی گلیاں ٹوٹی ہیں، ان کو بنوانے کیلئے کچھ نہیں کیا جارہا۔ سیوریج کا نظام بھی خراب ہے۔ برسات کی آمد آمد ہے جس میں علاقے کی گلیوں، سڑکوں پر پانی جمع ہونا ایک معمول بن جاتا ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ گلیوں اور سیوریج کے نظام کو بہتر بنا کر ترقیاتی کام فوری طور پر کروائے جائیں اور علاقے میں ہائی سکول کی بنیاد رکھی جائے۔ علاج معالجہ کیلئے ڈسپنسری قائم کی جائے۔ البدر ویلفیئر سوسائٹی کے بانی نے ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہم غریب لوگوں کی مدد کرتے ہیں۔ ان کے مسائل حل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ مالی امداد نہ ہونے کی وجہ سے البدر ویلفیئر سوسائٹی اپنے کام بہتر طریقہ سے سرانجام نہیں دے پارہی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -