پچاس برسوں کیلئے ہر سال 20 ہزار میگاواٹ سستی بجلی پیدا کر سکتے ہیں : ڈاکٹر ثمر مبارک مند

پچاس برسوں کیلئے ہر سال 20 ہزار میگاواٹ سستی بجلی پیدا کر سکتے ہیں : ڈاکٹر ثمر ...

  

سیالکوٹ (ثناءنےوز) پاکستان کے نامور ایٹمی سائنسدان وممبر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی و پلاننگ کمیشن آف پاکستان ڈاکٹر ثمر مبارک مند نے کہا ہے کہ وہ پچاس سالوں کیلئے ہرسال بیس ہزارمیگاواٹ سستی بجلی پیدا کرسکتے ہیں لیکن حکومت انہیں فنڈز فراہم نہیں کررہی تاہم انہوں نے فنڈز کے حصول کیلئے صدرآصف علی زرداری سے ملاقات کی ہے۔ سیالکوٹ میں چیمبرآف کامرس اینڈانڈسٹری کے شیخ محمد شفیع آڈیٹورےم میں پنجاب بھر کے چےمبر زآف کامرس اینڈاندسٹریز کے صدور کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ پاکستان قدرتی وسائل سے مالامال ہے لیکن مناسب منصوبہ بندی نہ ہونے کی وجہ سے ملک مسائل اوربحرانوںکاشکار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں گےس کابھی بحران ختم ہوسکتا ہے جس کیلئے چھ سو پچاس ملین ڈالرز کی ضرورت ہے اوراگر یہ فنڈز بھی فراہم کردیئے جائیں تو پورے ملک میں ضرورت سے زیادہ سستی گےس پیدا ہوگی ۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ تھر میںبجلی وسوئی گےس پیداکرنے کا جوپلانٹ لگایاگےا ہے وہاںسے شہر ساٹھ کلومیٹرکے فاصلہ پر ہے جس کی وجہ سے ملازمین مسائل کا شکار ہیں لیکن مسائل کے باوجود سخت حالات میں بھی یہ ملازمین اس پراجیکٹ پر بھرپور محنت سے کام کررہے ہیں تاہم حکومت ملازمین کے مسائل حل کرنے کیلئے بھی کوئی اقدامات نہیں کررہی ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ تھر میں جو پائپ لائن بچھائی گئی ہے اس کی بیس فٹ کے لمبائی کی لینتھ کا وزن آٹھ ٹن ہے جسے کرین اٹھاسکتی ہے لیکن ہیوی ویٹ مشینری ریت کی وجہ سے نہیں جاسکتی اس لئے یہ پائپ لائن بھی مزدور ہی محنت سے اٹھا رہے ہیں۔

مزید :

ایڈیشن 1 -