وزیر اعظم سے رینٹل پاور کیس میں تفشیش کی ضرورت پڑی تو سوالنامہ بھیج دینگے : نیب

وزیر اعظم سے رینٹل پاور کیس میں تفشیش کی ضرورت پڑی تو سوالنامہ بھیج دینگے : ...

 اسلام آباد (ثناءنیوز )نیب ترجمان حافظ محمد عرفان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف سے رینٹل پاور کیس میں تفتیش کی ضرورت ہوئی تو نیب سوالنامہ بھیج سکتا ہے۔ نیب نے راجہ پرویز اشرف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کے لیے بھجوادیا تھا اب وہ بیرون ملک جا سکتے ہیں یا نہیں یہ بتانا وزارت داخلہ کا کام ہے۔یہ بات نیب کے ترجمان حافظ محمد عرفان نے نیب ہیڈ کوارٹر میں منعقدہ نیوز بریفنگ میں سوالات کے جوابات دیتے ہوئے بتائی۔ انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم خود کہہ چکے ہیں کہ نیب نے تفتیش کے لیے بلایا تو ضرور جاوں گا۔ ترجمان نے بتایا کہ چیئرمین نیب کی جانب سے پانچ بڑی موبائل کمپنیوں کی جانب سے سینتالیس ارب روپے کی ٹیکس چوری کی خبروں کا نوٹس لینے کے بعد ایف بی آر کو ان کمپنیوں کو یہ ٹیکس معاف کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کرنے سے روک دیا ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ یہ رقم قومی خزانے میں جمع ہونے کا امکان ہے۔ پانچ موبائل کمپنیاں گذشتہ پانچ سال سے انٹر کنیکٹ چارجز ادا نہیں کررہی تھیں۔ گذشتہ روز چیئرمین ایف بی آراور چیئرمین نیب اور ان کی ٹیموں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں ایف بی آر نے ٹیکس معافی کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور ایف بی آر کی جانب سے کمپنیوں کے حکم امتناہی خارج کرانے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے بتایا کہ ٹیکس چوری میں اگر ایف بی آر کے کسی بھی افسر کے ملوث ہونے کے ثبوت سامنے آئے تو اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔

مزید : صفحہ اول