سینکڑوں پاکستانی شہری سعودی عرب میں رُل گئے ،حکومت خاموش،عیدپربھی ’پردیسی‘مایوس

سینکڑوں پاکستانی شہری سعودی عرب میں رُل گئے ،حکومت خاموش،عیدپربھی ...
سینکڑوں پاکستانی شہری سعودی عرب میں رُل گئے ،حکومت خاموش،عیدپربھی ’پردیسی‘مایوس

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک)دمام میں پھنسے 500پاکستانی ورکرز کے احتجاج کے بعد حکومت کو ہوش آگیا اور اُن کی مشکلات کم کرنے کیلئے وزارت خارجہ پاکستان نے سعودی حکام اور پاکستان میں سعودی سفیر کے سامنے معاملہ اٹھانے کا اعلان کردیا لیکن اب جدہ میں موجود’ ریوٹریڈنگ اینڈ کنٹریکٹنگ کمپنی لمیٹڈ‘کے سینکڑوں پاکستانی ملازمین 16ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہیں اور پھٹے پرانے کپڑوں میں نمازعید بھی اداکی ۔

ریوٹریڈنگ کے تعمیراتی شعبے سے وابستہ ایک پاکستانی ڈرائیور نے ’روزنامہ پاکستان‘کو بتایاکہ ’شرکة ریو کی طرف سے سڑک بنانے کا کام کررہے ہیں اور16ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ، ہم وطن اور دیگر تارکین وطن سے ادھار لے کر سحری و افطاری کرتے رہے ، پردیس میں بیٹھ کر پھٹے پرانے کپڑوں میں عید کی نماز اداکرلی ۔ ایک سوال کے جواب میں عالم خان کاکہناتھاکہ کمپنی نے پاسپورٹ بھی قبضے میں لے رکھاہے جبکہ تنخواہ مانگنے کے مطالبے پر بتایاجاتاہے کہ دینے کو رقم ہی نہیں ، اس کمپنی میں 700پاکستانی ورکر کام کررہے ہیں اور سب کی یہی حالت ہے،کل 1200غیرملکی ملازم ہیں،عید اپنے خاندان کیساتھ گزارنے کی خواہش تھی لیکن وہ بھی پوری نہ ہوسکی۔

اُنہوں نے دعویٰ کیاکہ پاکستانی سفارتخانے سے بھی کئی بار شکایت کی لیکن مسئلے کا ازالہ نہیں ہوسکا، چا رمہینے تک سفارتخانے جاتے رہے لیکن بالآخر جواب ملا کہ یہ پاکستان نہیں ہے ، کمپنی پر کیس کیا توفیصلہ آنے کے بعدشاید آپ کا مسئلہ حل ہوجائے لیکن پھر کسی بڑی پریشانی میں پھنس سکتے ہیں جس کے بعد واپس آگئے اور حالات جوں کے توں ہیں ، اگر تنخواہ کا مطالبہ کریں تو تنخواہ دیئے بغیر ہی دیگر کمپنیوں میں چلے جانے کا طعنہ ملتا ہے، استعفیٰ دینے کا فیصلہ کرچکے ہیں لیکن تنخواہ وصول کیے بغیر گھر ہی نہیں جاسکتے۔

اس ضمن میں پاکستانی سفارتخانے یا کمپنی کا موقف معلوم نہیں ہوسکا۔

مزید : عرب دنیا /اہم خبریں