محمود قادر لغاری کو نوجوانوں نے گھیر لیا ، سوالا ت کی بوچھاڑ

محمود قادر لغاری کو نوجوانوں نے گھیر لیا ، سوالا ت کی بوچھاڑ

ڈیرہ غازی خان (سٹی رپورٹر) حلقہ پی پی 291میں مسلم لیگ ن کے امیدوار محمود قادر لغاری کو امیدواراین اے 192سابق وزیر اعلی(بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

پنجاب میاں شہباز شریف اور اپنے لیے ووٹ مانگنا مہنگا پڑگیا،لیگی امیدوار محمود قادر لغاری کو لینے کے دینے پڑگئے،بستی جام میں ترقیاتی کاموں میں نمائندوں کی عدم دلچسپی پر انہیں شدید عوامی تنقید کا سامنا کرنا پڑا، تفصیل کے مطابق قصبہ بستی جام میں سابق لیگی ایم پی اے امیدوار حلقہ پی پی 291سردار محمود قادر خان لغاری کوالیکشن کمپین کے دوران اپنے اور این اے 192 کے لیے امیدوار سابق وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کے لیے ووٹ مانگنا مہنگا پڑگیا،لیگی امیدوار محمود قادر لغاری پراہل علاقہ نے تنقید کے تیر برسا دئیے اور لیگی ایم پی اے کے امیدوار پر سوالات کی بوچھاڑ کر دی،علاقہ کے نوجوانوں نے کہا کہ حکومت میں رہنے کے باوجود پانچ سال تک بستی جام میں واقع ایک ہسپتال اور سکولوں کے حالت زار کو بھی بہتر نہیں کیا جا سکا ترقیاتی فنڈز نہ ہونے سے پورا علاقہ پسماندہ ہے وہ تعلیم اور طبی سہولتوں سے محروم ہیں سیوریج کے مسائل جوں کے توں ہیں ہمارے علاقے کے منتخب کونسلر کو بے اختیارات رکھا گیا سابق وزیر اعلی نے اپر پنجاب کی ترقی کے لیے اربوں روپے کے فنڈز جاری کیے لیکن جنوبی پنجاب کو کچھ بھی نہیں دیا وہ جانوروں کی طرح زندگی گزار رہے ہیں اور اب ان سے ووٹ حاصل کرنے کی توقع کی جا رہی ہے محمود قادر لغاری نے علاقہ کے لوگوں کے گلے شکوئے سننے کے بعد انہیں آئندہ مسائل دور کرنے کی یقین دھانی کرائی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر