ایران نے ایک ساتھ 8 افراد کو پھانسی چڑھادیا

ایران نے ایک ساتھ 8 افراد کو پھانسی چڑھادیا
ایران نے ایک ساتھ 8 افراد کو پھانسی چڑھادیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

تہران (ویب ڈیسک) ایران نے سن 2017 ميں ملکی پارليمان اور آيت اللہ روح اللہ خمینی کے مزار پر ہونے والے حملے میں ملوث آٹھ افراد کی سزائے موت پر عملدرآمد کر ديا ہے۔ نیم سرکاری خبر رساں اداروں کی جانب سے اس کی تصدیق کر دی گئی ہے۔ سات جون 2017 کو تہران میں پارلیمان کی عمارت اور خمینی کے مزار پر داعش کے حملے میں 18 افراد ہلاک اور پچاس سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔ حملے میں ملوث بارہ سے زائد افراد کے خلاف عدالتی کارروائی اب بھی جاری ہے۔ اس حملے کے رد عمل میں پاسدان انقلاب نے مشرقی شام میں داعش کے ٹھکانوں پر میزائل بھی داغے تھے۔

مزید : بین الاقوامی