ایم ڈی پی ایس او کتنی تنخواہ لے رہے ہیں ؟ سپریم کورٹ میں ایسا انکشاف کہ سن کر چیف جسٹس بھی حیران پریشان رہ گئے

ایم ڈی پی ایس او کتنی تنخواہ لے رہے ہیں ؟ سپریم کورٹ میں ایسا انکشاف کہ سن کر ...
ایم ڈی پی ایس او کتنی تنخواہ لے رہے ہیں ؟ سپریم کورٹ میں ایسا انکشاف کہ سن کر چیف جسٹس بھی حیران پریشان رہ گئے

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ میں پٹرولیم مصنوعات پر عائد ٹیکسوںسے متعلق ازخودنوٹس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے کہا ہے کہ کل پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کچھ کمی کی گئی ،قیمتیں کم کرنے کاکوئی فارمولہ ہے؟،عدالت کو آگاہ کریں کیسے قیمتوں کا اتار چڑھاؤ کیا جاتا ہے؟۔اس پر اٹارنی جنرل نے کہا کہ جی بالکل کمی کی گئی ہے ۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایم ڈی پی ایس او سے استفسار کیا ہے کہ آپ کتنی تنخواہ لے رہے ہیں ،اس پر ایم ڈی نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں 37لاکھ روپے تنخواہ لے رہا ہوں ۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ افسوس عوامی ٹیکسوں سے چلنے والے ادارے سے اتنی تنخواہ لے رہے ہیں ؟،آپ کو بنیادی چیزوں کا پتہ نہیں اور تنخواہ 37لاکھ لے رہے ہیں ،آپ ایم ڈی پی ایس او کیسے تعینات ہوئے ؟ ۔

شیخ عمران نے کہا کہ میں ایک پرائیویٹ کمپنی میں ایم ڈی تھا ،پی ایس او میں درخواست دی تھی جس کے بعد تعینات ہو ا،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ آپ واپس اسی کمپنی میں کیوں نہیں چلے جاتے ؟ ، 37 لاکھ تو بہت زیادہ تنخواہ ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں حکومت کے پیسہ کمانے کیلئے ہیں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا کہ درآمد، کروڈ آئل اور ریفائنری تک پہنچنے میں کیا قیمتیں ہیں؟ ،اٹارنی جنرل نے کہا کہ کروڈ آئل کو ریفائنری درآمد کرتی ہیں،ایم ڈی پی ایس او نے کہا کہ 22 کمپنیاں ہیں جو پٹرول درآمد کرتی ہیں ۔

چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ 5 ریفائنریز کہاں کہاں موجود ہیں؟ ،اٹارنی جنرل نے کہا کہ این آر این اور پاکستان ریفائنری کراچی، بائیکو حب بلوچستان میں ہے،پارکو مظفرگڑھ اور اٹک ریفائنری راولپنڈی میں ہے،اٹارنی جنرل نے کہا کہ 15 فیصد مقامی پیداوار ،85 فیصد درآمد کیاجاتا ہے،ضروریات پوری کرنے کیلئے85 فیصد پٹرول درآمد کیا جاتا ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...