شیخوپور ہ پولیس کا شاندار کارنامہ، مفرور خطرناک مجرم کو آذربائیجان سے گرفتار کر کے پاکستان لے آئے

08 جولائی 2018 (14:05)

شیخوپورہ (ڈیلی پاکستان آن لائن ) شیخو پورہ پولیس انتہائی شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے انتہائی خطرناک ترین مفرور مجرم جواد مہندے بھٹی کو بیرون ملک سے گرفتار کر کے پاکستان واپس لے آئی ہے ۔

ریجنل پولیس آفیسر شیخو پورہ سہیل حبیب تاجک نے چارج سنبھالتے ہی خطرناک مجرمان اشہتاری، مفروران خاص کر جو بیرون ملک بھاگ گئے تھے، کی گرفتاریوں کے لیے ڈی پی اوز کو احکامات جاری کیے۔ جس پر ڈی پی او شیخو پورہ ڈاکٹر سردار غیاث گل نے ایس پی انویسٹی گیشن اسد الرحمن کی سربراہی میں ایک سپیشل ٹیم بنائی۔ ایس پی انویسٹی گیشن نے ذاتی دلچسپی لیتے ہوئے ٹیم کے ساتھ سب سے پہلے خطرناک مجرم اشتہاری جواد مہندے بھٹی پر کام شروع کیا۔ جو کہ جمشید نامی نوجوان کو ناحق قتل کرنے کے علاوہ بھتہ خوری اور متعدد مقدمات میں 2013ءسے مطلوب تھا۔

جواد کی لوکیشن ٹریسنگ اور ٹریول ہسٹری کے بارے میں جب پتہ چلا کہ یہ تقریباً پچھلے چھ ماہ سے (باکو) آزر بائیجان بیرون میں چھپ کر بیٹھا ہوا ہے جس پر فوراً اس کا ریڈ نوٹس کروایا گیااور اس کی گرفتاری کے لیے انٹرپول کی مددلی گئی۔ جس پر سپیشل ٹیم کے کچھ ارکان سب انسپکٹر شاہد اقبال کی سربراہی میں باکو آذر بائیجان روانہ کیے گئے۔ جو کہ اپنی محکمانہ مہارت اور تمام تروسائل کو بروے کارلاتے ہوئے اس خطرناک مجرم اشتہاری کو باکو سے گرفتار کر کے اپنے وطن پاکستان لے آئے۔

ڈسٹرکٹ پولیس شیخوپورہ کے اس کارنامے پر ریجنل پولیس آفیسر شیخو پورہ سہیل حبیب تاجک نے ڈی پی او شیخو پورہ ڈاکٹر سردار غیاث گل ، ایس پی انویسٹی گیشن اسد الرحمن اور انکی ٹیم کو شاباش دی اور انعامات کا اعلان کیا۔ مزید انسپکٹر جنرل آف پولیس کو اس ٹیم کے انعام کے بارے میں سفارش کی۔

ویڈیو دیکھیں:

مزیدخبریں