’’میری سہیلی رات رہنے میرے گھر آئی تھی، صبح 4بجے اچانک دروازہ کھلا اور۔۔۔ ‘‘ نوجوان لڑکی نے پولیس والوں کو اپنے ہی گھر کی ایسی شرمناک ترین بات بتا دی کہ ہر کسی کا چہرہ لال ہوگیا

’’میری سہیلی رات رہنے میرے گھر آئی تھی، صبح 4بجے اچانک دروازہ کھلا اور۔۔۔ ...
’’میری سہیلی رات رہنے میرے گھر آئی تھی، صبح 4بجے اچانک دروازہ کھلا اور۔۔۔ ‘‘ نوجوان لڑکی نے پولیس والوں کو اپنے ہی گھر کی ایسی شرمناک ترین بات بتا دی کہ ہر کسی کا چہرہ لال ہوگیا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں خواتین کے ساتھ جنسی زیادتیوں کی صورتحال اس قدر سنگین ہو چکی ہے کہ کیا ماں، کیا بیٹی اور کیا بیٹی کی بیٹی جیسی سہیلی، کوئی عورت بھی محفوظ نہیں رہی، حتیٰ کہ اپنے گھر کے اندر بھی۔ گزشتہ دنوں بھارتی شہر گروگرام میں بھی ایسا ہی ایک شرمناک واقعہ پیش آیا ہے جس پر شیطان بھی شرم سے منہ چھپاتا پھرے۔ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق گروگرام میں ایک 18سالہ قانون کی طالبہ اپنی ایک سہیلی کے گھر رات رہنے آئی، جہاں اسے اس کی سہیلی کے باپ نے ہی جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ یہ دونوں لڑکیاں بچپن کی سہیلیاں تھیں اور متاثرہ لڑکی اس درندہ صفت شخص کو بچپن سے ’انکل‘ کہتی آ رہی تھی اور اس کی بیٹی کے جیسی تھی۔

رپورٹ کے مطابق طالبہ اگلے روز پولیس کے پاس چلی گئی اور مقدمہ درج کرا دیا۔اس کی سہیلی بھی اس کے ساتھ مقدمہ درج کرانے پولیس سٹیشن گئی جہاں اس نے باپ کے خلاف گواہی دیتے ہوئے پولیس کو بتایا کہ ’’ ہم تب سے سہیلیاں ہیں جب ہم تیسری کلاس میں پڑھتی تھیں۔ وہ ہمارے گھر رات رہنے آئی تھی۔ہم ایک ہی کمرے میں سو رہی تھیں کہ صبح چار بجے کے قریب میرا باپ دروازہ کھول کر اندر داخل ہوا اور میری سہیلی کے منہ پر ہاتھ رکھ کر اسے اٹھا کر اپنے کمرے میں لے گیا اور جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ واپس آ کر میری سہیلی نے مجھے جگایا اور واقعے کے بارے میں بتایا۔میرے باپ نے جو گھناؤنا کام کیا ہے اس کی اسے کڑی سزا ملنی چاہیے۔ میں سوچ بھی نہیں سکتی تھی کہ میرا باپ اس کے ساتھ ایسی حرکت کرے گا۔ وہ بچپن سے اسے انکل کہتی آ رہی تھی اور وہ بھی اسے بیٹی کہہ کر پکارتا تھا۔‘‘

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...