علامہ اقبال ٹاؤن میں سیکیورٹی گیٹ گرائے جانے کیخلاف پر مکین سراپا احتجاج

  علامہ اقبال ٹاؤن میں سیکیورٹی گیٹ گرائے جانے کیخلاف پر مکین سراپا احتجاج

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) ایل ڈی اے کی طرف سے بغیر نوٹس جاری کئے علامہ اقبال ٹاؤن میں رہائشیوں کی طرف سے سیکورٹی کے لیے لگائے گئے گیٹ گرانے پر اہل علاقہ سراپا احتجاج۔ صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمود الرشید کو نوٹس لینے کا مطالبہ ۔ہم نے وزیر اعظم پورٹل سیل کے حکم پر گیٹ گرائے ایل ڈی اے کاموقف۔ کامران بلاک، مہران بلاک، نشتر بلاک،کشمیر بلاک ستلج بلاک کے رہائشی چوہدری اعجاز احمد، قاسم رضا، حاجی بشیر احمد، حاجی حنیف، حاجی عمر، ڈاکٹر عبدالرشید، مقبول احمد،فیاض احمد،چوہدری خورشیدکا کہنا ہے حکومت نہ تو سیکورٹی فراہم کرتی ہے اور نہ گیٹ لگانے دیتی ہے۔ تحریک انصاف کے اس اقدام کے خلاف عوام میں سخت اضطراب پایا جا رہا ہے۔ علامہ اقبال ٹاؤن کے مختلف بلاکس کے رہائشیوں نے بڑھتی ہوئی چوری اور ڈکیتی کی وارداتوں کے بعد اپنی مدد آپ کے تحت ہزاروں روپے اکٹھے کر کے اپنی حفاظت کے لیے گیٹ لگائے تھے جس کی وجہ سے چوریوں اور ڈکیتی کی وارداتیں کم ہو گئی تھی۔ اب بغیر نوٹس دئیے لاکھوں روپے کے گیٹ گرا دیتے گئے ہیں اہل علاقہ کو چوروں اور ڈاکوں کے رحم کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے۔ ایل ڈی اے کے اہلکار وں نے بعض علاقوں کے رہائشیوں سے پیسے لے کر گیٹ نہیں گرائے یہ بھی سراسر زیادتی ہے۔ صوبائی وزیر نوٹس لیں اور اقبال ٹاؤن کے رہائشیوں کی جان و مال کی حفاظت کے لیے بلاوجہ گرائے گئے گیٹ دوبارہ لگانے کا انتظام کریں۔ معززین کا کہنا ہے جب اتفاق ہو گیا ہے گیٹ دن کو کھلے رہیں گے اور رات کو بند کیے جائیں گے۔ اس کے باوجود بلاوجہ گیٹ گرانے کی سمجھ نہیں آئی۔اقبال ٹاؤن کے رہائشی سیکورٹی گارڑز کو خود ادائیگی کرتے ہیں۔حکومت نہ عوام کی سیکیورٹی کا انتظام کرتی ہے اور نہ گیٹ لگانے کی اجازت دے رہی ہے۔ حکومتی اقدامات سے تحریک انصاف کی حکومت سے نیک نامی میں اضافہ نہیں ہو رہا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -