وفاقی وزیر عمر ایوب کے استعفیٰ کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

وفاقی وزیر عمر ایوب کے استعفیٰ کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)وفاقی وزیر عمر ایوب کے استعفیٰ کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع،قرارداد مسلم لیگ (ن) کی رکن سمیرا کومل کی جانب سے جمع کرائی گئی۔ملک بھر میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کے ساتھ بجلی چوری کا سلسلہ بھی عروج پر ہے۔آڈیٹرجنرل آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق مالی سال 2018-19 تک بجلی چوری سے 2 ارب 52 کروڑ کا نقصان ہوا۔کمپنیاں بجلی چوروں سے واجبات کی وصولی میں ناکام رہی ہیں۔ رپورٹ میں ایک لاکھ 90 ہزار 897 بجلی چوروں کی نشاندہی کی گئی۔

بجلی چور،غیر قانونی کنکشنز،ٹمپرڈ میٹرز کے ذریعے بجلی چوری میں ملوث ہیں۔ دستاویز کے مطابق لیسکو بجلی چوروں سے واجبات کی عدم وصولی میں سرفہرست ہے۔کمپنی11 ہزار 103 بجلی چوروں سے 2 ارب 19 کروڑ روپے وصولی نہ کرسکی۔یہ ایوان 2 ارب 52 کروڑ کی بجلی چوری ہونے پر گہری تشویش کا اظہار کرتا ہے۔وزرات بجلی پانی عوام کو بجلی کی فراہمی اور بجلی چوری روکنے میں ناکام ہو چکی ہے۔یہ ایوان وفاقی وزیر عمر ایوب کے فوری استعفیٰ کا مطالبہ کرتا ہے۔عمر ایوب اہم ترین وزارت چلنے میں بری طرح ناکام ہو چکے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -