پشاور کے بعض ناسمجھ اور خود عرض وکلا کے رویے کی پرزور مذمتکرتے ہیں،امجد شاہ

پشاور کے بعض ناسمجھ اور خود عرض وکلا کے رویے کی پرزور مذمتکرتے ہیں،امجد شاہ

  

سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان)پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک پین کے صوبائی نائب صدر اور ممبر پی ایس آر اے امجد علی شاہ نے پر یس کانفر نس سے خطاب کرتے ہو ئے پشاور کے بعض ناسمجھ اور خود عرض وکلا کے رویے کی پرزور مذمت کی ہے جو نجی سکولز مالکان کو مافیاقرار دے کر والدین اور مالکان کے درمیان غلط فہمیاں پیدا کر رہے ہیں انھوں نے خبردار کیا کہ اگر ان مٹھی بھر وکلا نے اپنی سازش بند نہ کی توپشاور سمیت صوبے بھر میں ان کے خلاف احتجاجی مظا ہرے اور عدالتی چارہ جوئی کی جائے گی انھوں نے افسوس کا اظہارکیا کہ اصل صورت حال سے بے خبر مٹھی بھر وکلاکے پروپیگنڈے میں کوئی حقیقت نہیں کیونکہ سرکاری اعداد وشمار کے مطا بق خیبر پختونخوا کے72فیصد نجی سکولز 500اور1000روپے کے درمیان جبکہ 20فیصد1000سے 4000تک ماہا نہ فیسیں لے رہے ہیں جن سے بمشکل ان کے اخراجات تنخواہیں کرایے اور یو ٹیلیٹی بلز وغیرہ پورے ہو تے ہیں انھوں نے کہاکہ صوبے کے محض۱یک فیصدسکولوں کی فیسیں 6000سے زائد ہیں تاہم یہاں پر طلبا کو دی جانے والی سہولتوں کے مقابلے میں یہ فیس کچھ بھی نہیں انھوں نے کہا کہ صوبے کے8000سے زائد نجی سکولز اس وقت22لاکھ سے زائد طلبا کی تعلیم و تربیت کے ساتھ ساتھ روزگار کی فراہمی کا بھی اہم ذریعہ ہیں انھوں نے کہا کہ وکلا جیسے پڑھے لکھے طبقے کو حقائق مد نظر رکھ کرنجی سکولز کو موجودہ مشکلات اور بحرانی کیفیت سے نکالنے میں مدد کرنی چاہیے نا کہ بلاوجہ تنقید کا نشا نہ بنا نا چا ہیے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -