کیمسٹس ایسوسی ایشن کا ادویات پر ٹیکس لگانے کا فیصلہ مسترد

کیمسٹس ایسوسی ایشن کا ادویات پر ٹیکس لگانے کا فیصلہ مسترد

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور(سٹی رپورٹر)خیبر پختونخوا کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن نے ادویات فروشوں پر ٹیکس لگانے کے فیصلے کو مسترد کر دیا اور کہا ہے کہ حالیہ بجٹ میں نان ٹیکس فائلرز پرایک اور فائلرز پر اعشاریہ پانچ فیصد ٹیکس کا نفاذ ناانصافی ہے، ایوسی ایشن کے چیئرمین محمد اسماعیل، ہمایون فضل، جنرل سیکرٹری عبدالوکیل صافی، جمال الدین اور فیاض محب اللہ سمیت دیگرنے کہا کہ حکومت نے بجٹ میں ادویات فروشوں پر ٹیکس کا نفاذ کر دیا اور فیصلہ کیا گیا ہے کہ یہ ٹیکسز ایف بی آر اور ٹیکس وصول کرنے والے اداروں کی بجائے ڈسٹربیوٹرز کے ذریعے وصول کی جائیگی تاہم اس فیصلے سے ادویات فروشوں میں شدید تشویش پائی جاتی ہے کیونکہ اس روزگار سے وابستہ اکثریتی افراد پہلے ہی سے ٹیکسزدیتے ہیں ادویات فروشی سے منسلک اکثریتی لوگ ٹیکس فائلرز ہیں ایف بی آر ٹیکس نان فائلر کو نیٹ میں لائے کیونکہ ڈسٹریبیوٹر کیمسٹوں سے ٹیکس جمع کرانے کے مجاز نہیں ایف بی آر ٹیکس کلیکشن کے لیے کیمسٹوں کی درجہ بندیاں کرنی چاہیے ان کا کہنا تھا کہ ڈسٹریبیوٹر کے ذریعے ٹیکس وصولی سے ٹیکس ریٹرن کے وقت کیمسٹوں کو مشکلات ہونگے ڈرگ ایکٹ 1976 کے تحت ڈسٹریبیوٹر کمیسٹوں کو 15 فیصد دینے کا پابند ہے اورمزید 1 فیصد ٹیکس لگانا ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی ہے ڈسٹری بیوٹر کی ادویات فروشوں کی بلنگ کے وقت فیک ڈاکومنٹیشن ختم کرنے کے لئے طریقہ کار وضع کیا جائے انہوں نے کہا کہ کورونا اور لاک ڈاؤن صورتحال سے ادویات فروش بھی مالی طور پر متاثر ہوئے ادویات کی ایکسپائری لیکج، بریکج کا مسئلہ فوری حل کیا جائے اورٹیکس کا فیصلہ واپس لیا جائے۔